خورشید شاہ کے بعدسینیٹر مولابخش چانڈیوبھی شہبازشریف کے حق میں بول پڑے

خورشید شاہ کے بعدسینیٹر مولابخش چانڈیوبھی شہبازشریف کے حق میں بول پڑے
خورشید شاہ کے بعدسینیٹر مولابخش چانڈیوبھی شہبازشریف کے حق میں بول پڑے

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پیپلز پارٹی کے سینیٹر مولا بخش چانڈیو نے کہاہے کہ شہبازشریف کو ہٹانے سے پارلیمنٹ میں مشکل پیدا ہوجائیگی ، حکومت طریقہ کار کے مطابق چلے گی تو نظام چلے گا۔

جیونیوز کے پروگرام”کیپٹل ٹاک“ میں گفتگو کرتے ہوئے مولابخش چانڈیو نے کہا کہ عوام کی حالت دیکھیں کہ بجلی ، گیس کی قیمتوں میں اضافہ کردیا گیا ہے ، وزیراعظم نے گیس کی قیمتوں میں اضافے کا ایسے نوٹس لیا جیسے وہ بے خبر تھے ، وزیر اعظم کا بیان کہ مجھے تو پتہ ہی نہیں کہ اتنے مسائل تھے ، یہ بے خبری کیوں تھی کیا وہ حکومت لینے کی بجائے کسی شادی پر جارہے تھے ؟

انہوں نے کہا کہ اس وقت لوگوں کی زندگی حرام ہوگئی ہے ، لوگوں کو نوکریوں سے نکالا جارہاہے ، عمران خان نے کہاہے کہ بھیک ہم نہیں مانگیں گے ، خودکشی کریں گے لیکن اب وہ اس خاتون کے پاس خود گئے ہیں جو آئی ایم ایف کی سربراہ ہیں، عمران خان نے عوام کے ساتھ زیادتی ہے ، آئی ایم ایف کے پاس جارہے ہیں اور وزراءکہہ رہے ہیں کہ عوام کیلئے آئی ایم ایف کے پاس جارہے ہیں، حکومت آئی ایم ایف اور دوست ممالک سے ابھی اور قرضے لے گی ۔

ان کا کہنا تھا کہ شہبازشریف کو ہٹانے سے پارلیمنٹ میں مشکل پیدا ہوجائیگی ، حکومت طریقہ کار کے مطابق چلے گی تو نظام چلے گا ، یہ قومی اسمبلی میں بھی بحران پیدا کرنا چاہتے ہیں، یہ طریقہ کار نہیں چلے گا ۔

مزید : قومی