سیپ ڈیجیٹل پاکستان میں ملازمت کی ڈیجیٹل تخلیق کی حمایت کرتا ہے

سیپ ڈیجیٹل پاکستان میں ملازمت کی ڈیجیٹل تخلیق کی حمایت کرتا ہے

  



لاہور ( پ ر) ورلڈ اکنامک فورم میں وزیر اعظم عمران خان اورSAPکے شریک چیف ایگزیکٹیو آفیسر کرسچن کلین کے درمیان ہونے والی ملاقات میں SAPنے ڈیجیٹل پاکستان کی ملک بھر میں تبدیلی، متنوع معاشی نمو، اور ڈیجیٹل ملازمت کی تخلیق کی حمایت کرنے کیلئے پاکستان میں لگائی گئی سرمایہ کاری کے منصوبوں پرروشنی ڈالی۔ ورلڈ اکنامک فورم کے مطابق پاکستانی معیشت میں ڈیجیٹل سیکٹر میں مضبوط سرمایہ کاری 5.8فیصد کی شرح سے ترقی کر رہی ہے۔ صنعتی ماہرین اس بات پر متفق ہیں کہ پاکستان نئی اور ابھرتی ہوئی ٹیکنالوجیز کے ساتھ چوتھے صنعتی انقلاب سے فائدہ اٹھا سکتا ہے تاکہ صنعت کے عمودی حصہ کو ڈیجیٹل طور پر تبدیل کیا جاسکے۔ درج ذیل اقدامات سے مستقبل میں افرادی قوت تیار کی جا سکے گی۔ ڈیوس میں منعقدہ حالیہ ورلڈ اکنامک فورم کے موقع پر کرسچن کلین نے پاکستانی حکومت کی ڈیجیٹل تبدیلی کی تعریف کی۔ انہوں نے 20سال سے زیادہ عرصہ تک پاکستان کے ساتھ سیب کی طویل وابستگی پر بھی روشنی ڈالی، اور نوجوان سوفٹ ویئر انجینئروں کو ڈیجیٹل کیرئیر کی تربیت دینے کے عزم کا اظہار کیا۔ کستان کے منیجنگ ڈائریکٹر ثاقب احمد کا کہنا تھاکہ ’نجی اور سرکاری شراکت داری ایک جامع اور ابھرتی ہوئی ڈیجیٹل معیشت کے اہداف حاصل کرنے میں بہت ضروری ہیں۔’بلڈ ان پاکستان فار پاکستان کی طویل المدتی سرمایہ کاری اور ڈیجیٹل پاکستان میں معاون ہوگی۔ ہم صارفین کے تعاون سے جدت، ماحولیاتی نظام کیلئے چینل پارٹنر اور پاکستان کے ہنر مند افراد کو تربیت دے کر نئی مہارت سے ملازمتوں کے مواقع فراہم کریں گے۔ پاکستان میں SAPکے ساتھ حکومتی اور سرکاری شعبہ، زراعت، آٹوموٹیو، بینکنگ اور فنانس، ایف ایم سی جی، ٹیلی مواصلات اور ٹیکسٹائل سمیت صنعت کے مختلف شعبے مشترکہ طور پر جدت کیلئے اقدامات کر رہے۔

ہیں۔حال ہی میں SAPنے سروسز حب کا آغاز کیا جس میں کمپنی کا مقصد چینل پارٹنر نفاذی کے طریقہ سے پاکستانی اداروں میں کامیابی سے ڈیجیٹل تبدیلی پر عملدآمد کو یقینی بنایا جائے۔مستقبل میں بھی پاکستان کی افرادی قوت کی تربیت جاری رکھے ہوئے ہے۔ مثال کے طور پر ٹریننگ اینڈ ڈویلپمنٹ انسٹیٹیوٹ کے ذریعہ نوجوان کیلئے پیشہ وارانہ تربیت کا پروگرام، جو تکنیکی اور سافٹ مہارت کا 3ماہ طویل کورس ہے، 5گروپس میں مجموعی طور پر 130شرکاء SAPایسو سی ایٹ کنسلٹنٹ کی حیثیت سے فارغ التحصیل ہوں گے۔ بین الاقوامی سطح پر نوجوان پیشہ وارانہ تربیتی پروگرام سے فارغ التحصیل 99فیصد سے زائد افراد کو کامیابی سے ملازمت حاصل ہوئی۔ پاکستان بھر میں SAPکی مجموعی افرادی قوت میں سے 50فیصد ممبران SAPاکیڈمی سے آتے ہیں، جو سیلز، پری سیلز اور کمرشل سیلز میں دلچسپی رکھنے والے افراد کو عالمی معیار کا تربیتی تجربہ فراہم کرتے ہیں۔

مزید : کامرس