مقبوضہ کشمیر، مقبول بٹ شہید کی 36ویں برسی پر مکمل ہڑتال، ٹرانسپورٹ معطل

  مقبوضہ کشمیر، مقبول بٹ شہید کی 36ویں برسی پر مکمل ہڑتال، ٹرانسپورٹ معطل

  



سرینگر(آئی این پی)مقبوضہ کشمیر میں جموں و کشمیر لبریشن فرنٹ کے بانی مقبول بٹ شہید کی 36ویں برسی کے موقع پر مکمل ہڑتال کی گئی۔ بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق آزادی کے متوالے مقبول بٹ کو 11فروری 1984کو تہاڑ جیل میں پھانسی دی گئی تھی اوروہیں دفن کیا گیا تھا۔ برسی کے موقع پر وادی کے تمام ضلعی اور تحصیل ہیڈکوارٹرز میں دکانیں و تجارتی مراکز بند رہے جبکہ سڑکوں پر گاڑیوں کی آمد ورفت معطل رہی۔اس دوران سکیورٹی وجوہات کی بنا پر وادی بھر میں ریل سروس معطل رہی۔حکام نے میڈیا کو بتایا کہ مقبول بٹ کی برسی کے موقع پر احتیاطی اقدام کے طور پر گزشتہ روز کشمیر میں موبائل انٹرنیٹ سروس کوعلی الصبح معطل کر دیا۔اس سے قبل مقبوضہ کشمیر میں سینکڑوں پوسٹرز چسپاں کیے گئے تھے جن میں لوگوں سے اپیل کی گئی کہ وہ مقبول بھٹ کی برسی کے دن بھارت کے خلاف ہڑتال کریں۔ تحریک آزادی جموں و کشمیر، تحریک نوجوانان حریت اورتحریک وارثان شہدائے جموں و کشمیرکی طرف سے یہ پوسٹر سری نگر، بڈگام، گاندربل، بارہ مولا، بانڈی پورہ،پلوامہ،شوپیاں اور دیگر اضلاع کی عام شاہراہوں اور گلیوں سمیت تمام اہم مقامات پر چسپاں کیے گئے۔حکام نے بھارت مخالف احتجاجی مظاہروں کو روکنے کیلئے سکیورٹی کے نام پر سخت پابندیاں نافذ کردیں تھی۔ تمام اہم مقامات پربھارتی فوج، پولیس اور پیراملٹری فورسز کے اہلکاروں کی بڑی تعداد تعینات کی گئی۔ بھارت مخالف مظاہروں کو روکنے کیلئے تمام بڑی سڑکوں پرخار دار تاریں اور رکاوٹیں کھڑی کر دی گئیں۔

مقبوضہ کشمیر

مزید : صفحہ اول