شوکت یوسفزئی کی سربراہی میں خیبر پختونخوا وزارت اطلاعات کے وفد کی لاہور آمد

  شوکت یوسفزئی کی سربراہی میں خیبر پختونخوا وزارت اطلاعات کے وفد کی لاہور آمد

  



لاہور (سٹاف رپورٹر) خیبرپختونخوا کی وزارت اطلاعات کا اعلیٰ سطحی وفد صوبائی وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی کی سربراہی میں تین روزہ دورہ پر گزشتہ روز لاہور پہنچ گیا۔ وفد کے دیگر ارکان میں سیکریٹری انفارمیشن سید امتیاز جسین شاہ،نظامت اطلاعات و تعلقات عامہ کے سربراہ بہرامند خان درانی اور ڈی جی پی آر امداد اللہ خان شامل ہیں۔ وفد کے ارکان پنجاب کے وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان، ڈی جی پی آر پنجاب ڈاکٹر اسلم ڈوگر سمیت دیگر اعلیٰ افسران سے ملاقات کریں گے اور میڈیا کو اشتہارات کی تقسیم کے حوالے سے اہم سرکاری امور پر گفتگو ہوگی۔ کے پی کے کا یہ وفد پنجاب میں محکمہ تعلقات عامہ کی ورکنگ کا جائزہ لینے کیساتھ ساتھ میڈیا ریلیشنگ کے طریقہ کار کا مشاہدہ بھی کرے گا۔ گزشتہ روز وفد کے اراکین نے مولانا ظفر علی خان ٹرسٹ کی جانب سے منعقدہ فکری نشست میں شرکت کی۔ جس کی صدارت ٹرسٹ کے سربراہ خالد محمود نے کی جبکہ ڈاکٹر شفیق جالندھری نے ماڈریٹر کے فرائض انجام دیئے۔ میڈیا حکومت تعلقات کے موضوع پر منعقدہ اس نشست میں یونیورسٹیز وکالجز کے سینئر پروفیسرز، ممتاز دانشوروں، صحافیوں سمیت دیگر شعبہ زندگی کے افراد بھی موجود تھے۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے بہرامند خان درانی نے کہا کہ خیبرپختونخوا میں حکومت کے میڈیا کے ساتھ مثالی تعلقات ہیں، ہم حجرہ سسٹم میں ایک دوسرے کے معاملات پر سیرحاصل گفتگو کرتے ہیں اور دونوں فریق ایک ہی گاڑی کے دو پہیوں کے مانند فرائض انجام دے رہے ہیں۔ اختلافی مسائل بھی زیربحث آتے ہیں لیکن ہم ان پر بھی متشدد رویہ اختیار کرنے کی بجائے ایک دوسرے کو حوصلے سے سنتے ہیں۔ نظامت تعلقات عامہ کے سربراہ کا کہنا تھا کہ ہم نے کے پی کے میں اشتہارات کی تقسیم اور ادائیگیوں کا منصفانہ نظام متعارف کروایا ہے جس کے وزیراعلیٰ محمود خان اور وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی بھی معترف ہیں، ان کا کہنا تھا کہ ہم میڈیا کو باقاعدہ اپنا حصہ سمجھتے ہیں اور حالیہ بحرانی کیفیت میں میڈیا ہاؤسز سے جو کارکن صحافی فارغ کئے گئے ہم نے ایک طرف تو انہیں متبادل روزگار کی فراہمی یقینی بنائی تو دوسری جانب اشتہارات کو میڈیا ورکرز کی تنخواہوں کی بروقت ادائیگی سے مشروط بھی کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ڈی جی پی آر کے پی کے نے صحافیوں سے تعلقات کا جو ڈول ڈالا ہے اس کو اے پی این ایس اور سی پی این ای نے بھی خوب سراہا۔ تقریب کے صدر خالد محمود نے مہمانوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ خیبرپختونخوا پاکستان کا حساس اور اہم ترین صوبہ ہے جہاں کے باسیوں نے دہشت گردی کی ایک بڑی لہر کا جرات مندانہ اور جانفشانہ مقابلہ کیا، پوری قوم اہل خیبر کو اس پر مبارکباد پیش کرتی ہے۔ تقریب کے میزبان ڈاکٹر شفیق جالندھری نے خیبر کو پاکستان کا قلعہ قرار دیا اور کہا کہ ہم سب اہل خیبر کی دانش، مہمان نوازی اور جرات کو سلام پیش کرتے ہیں۔

وزار ت اطلاعات

مزید : صفحہ آخر