آرٹس کونسل کراچی میں خفیہ ممبر سپ کا سلسلہ روکا جائے، دی آرٹس فورم

آرٹس کونسل کراچی میں خفیہ ممبر سپ کا سلسلہ روکا جائے، دی آرٹس فورم

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر) دی آرٹس فورم نے آرٹس کونسل کی گورننگ باڈی کی جانب سے خفیہ طور پر منظور نظر افراد کو ممبر شپ فارم کے اجراء کے خلاف چیئرمین آرٹس کونسل آف پاکستان اور کمشنر کراچی افتخار شہلوانی کو خط لکھ دیا جس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ صریحاً ناانصافی پر مبنی اس عمل کو روکا جائے کیونکہ یہی وہ عمل ہے جوگزشتہ کئی برس سے مسلسل جاری ہے اور اس کی بنیاد پر برسراقتدار گروپ الیکشن میں کامیابی دعویٰ کرتا رہا ہے۔آرٹس فورم کے عہدیداروں نجم الدین شیخ،مبشر میر،نعیم طاہر،زیڈ ایچ خرم اور دیگر کی جانب سے لکھے گئے خط میں ان عہدیداروں نے مطالبہ کیا ہے کہ ممبر سازی کا طریقہ کار شفاف اور غیر جانبدارانہ ہونا چاہیے۔ اس وقت ضروری ہے کہ بحیثیت چیئرمین آرٹس کونسل کی ممبر شپ کے عمل کو براہ راست اپنی نگرانی میں لے لیں اور ایک غیر جانبدار کمیٹی تشکیل دیں اور یہ کمیٹی ممبر سازی کا طریقہ کار وضع کرے اور اسے 30جون 2020سے پہلے تک مکمل کرکے ممبرز کی مکمل فہرست بمعہ کوائف جاری کرے تاکہ اس سال الیکشن کا عمل شفاف اور قابل اعتماد بن سکے۔انہوں نے کہا کہ خفیہ اور منظور نظر افراد کی ممبر شپ کے نتیجے میں آرٹس کونسل کے ممبر بننے کے مستحق اور اہل ہزاروں افراد ممبر شپ سے محروم ہیں۔انہوں نے کہا کہ شفاف ممبر شپ کے نتیجے میں آرٹس کونسل کی ثقافتی سرگرمیوں میں اضافہ ہوگا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر