چیف سیکریٹری سندھ کیزیر صدارت لینڈ ریزرویشن کمیٹی کا اجلاس

  چیف سیکریٹری سندھ کیزیر صدارت لینڈ ریزرویشن کمیٹی کا اجلاس

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر) چیف سیکریٹری سندھ سید ممتاز علی شاہ کی صدارت میں لینڈ ریزرویشن کمیٹی کا اجلاس سندھ سیکریٹریٹ میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں صوبے کے مختلف علاقوں میں سرکاری زمین کے عوامی مقاصد کے لئے مختلف سرکاری اداروں کے لئے مختص کی گئی۔ جن میں گلشن حدید میں 50 بیڈ اسپتال کی تعمیر کے لئے 5 ایکڑ، گلشن اقبال میں پی ڈی ایم اے اور ریسکیو کامپلیکس کے لئے 2.6 ایکڑ زمیں مختص کی گئی۔ ریزرویشن کمیٹی کے اجلاس میں حیدرآباد میں سندھ پبلک سروس کمیشن کامپلیکس کے لئے 1 ایکڑ اور مٹھی میں پولیس لائین کے لئے 74 ایکڑ، قاسم آباد ہائے وی پر ٹراما سینٹر اور سرکاری جامعات کے کیمپس اور سرکاری دفاتر کے لئے دیہہ ساری میں 246 ایکڑ زمین مختص کی گئی ہے۔ اجلاس میں بتایا گیا کے حکومت سندھ کی جانب سے مختلف شہروں میں لینڈ فل سائیٹ بنانے کا منصوبا ہے۔ کمیٹی نے جوھی، جامشورو، کوٹری، ٹنڈو الہیار، خیرپور ناتھن شاہ اور مٹیاری میں لینڈ فل سائیٹ بنانے کے لئے بھی زمین دینے کی منظوری دی۔ اجلاس میں چیف سیکریٹری سندھ سید ممتاز علی شاہ نے کمشنر میرپور خاص اور سیکریٹری لینڈ یوٹیلائیزیشن کو ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ لینڈ ریزرویشن کمیٹی کے آئندہ اجلاس میں این ای ڈی یونیورسٹی کے مٹھی کیمپس کے لئے 300 ایکڑ زمین کا ایجنڈا پیش کیا جائے۔ انہونے تمام ڈپٹی کمشنر کو ہدایت کے کہ وہ تمام سرکاری زمین سے تجاوزات کو ہٹائیں۔ انہونے کہا کے مختص ہوئے زمین کی منظوری کے لئے وزیر اعلیٰ سندھ کو سمری بھیجی جائے گی۔ ممتاز علی شاہ نے مزید کہا کے کراچی میں قبرستان کے لئے مختص ہوئے زمین کا ایجنڈا صوبائی کابینہ کے اجلاس میں پیش کیا جائے گا۔ اجلاس میں سینئر میمبر بورڈ آف ریونیو قاضی شاہد پرویز، کمشنر حیدرآباد محمد عباس بلوچ، کمشنر میرپور خاص عبدالوحید شیخ،  سیکریٹری بحالیات ریاض حسین سومرو، ڈپٹی کمشنر حیدرآباد عائشہ ابڑو، ڈپٹی کمشنر دادو شاہ زمان کھیڑو، ڈپٹی کمشنر ملیر شہزاد عباسی، ڈپٹی کمشنر ایسٹ احمد علی اور سیکریٹری لینڈ یوٹیلائیزیشن سمیت متعلقہ ڈپٹی کمشنر نے شرکت کی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر