احسان اللہ احسان کا فرار سوالیہ نشان،معاہدے کے تحت رہائی ملی،حاصل بزنجو

    احسان اللہ احسان کا فرار سوالیہ نشان،معاہدے کے تحت رہائی ملی،حاصل بزنجو

  



چارسدہ (بیورورپورٹر) بی این پی کے مرکزی صدر حاصل بزنجونے کہا ہے کہ ٹی ٹی پی کے ترجمان احسان اللہ احسان کی فوج کی حراست سے فرار سوالیہ نشان ہے۔لگتا ہے کہ احسان اللہ احسان معاہدے کے تحت گرفتار اور رہا ہوئے۔ وہ چارسدہ میں سابق گورنر حیات محمد خان شیر پاؤ کی 45ویں برسی کے حوالے سے منعقدہ جلسہ سے خطاب کر رہے تھے۔ حاصل بزنجونے کہا کہ اسٹیبلشمنٹ نے الیکشن میں جھرلو چلا کر عوامی مینڈیٹ کی توہین کی۔ موجودہ حکومت اخلاقیات سے عاری ہے۔ نااہل حکومت کی وجہ سے ملک معاشی طور پر تباہ ہو چکا ہے۔ حکومت کے لئے اگلا بجٹ پیش کرنا مشکل ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ٹی ٹی پی کے ترجمان احسان اللہ احسان کی فوج کی حراست سے فرار سوالیہ نشان ہے اور لگتا ہے کہ احسان اللہ احسان معاہدے کے تحت آئے تھے اور وہی معاہدے کے تحت چلے گئے۔جن طاقتوں نے اس سلیکٹیڈ حکومت کو مسلط کیا ہے وہ ساری صورتحال کے ذمہ دار ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکمران جماعت کے منتخب ایم این ایز او ر ایم پی ایز کو ان کے حلقے کے عوام بھی نہیں جانتے بلکہ ان کی یہ حیثیت بھی نہیں کہ کونسلر کی نشست جیت سکے۔ انہوں نے کہا کہ سیاست میں بد تمیزی کا طوفان تحریک انصاف اور ان کی حکومت نے متعارف کرائی ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر