سعید غنی کا لیاری کے اسکولوں کا دورہ، اساتذہ کی حاضری چیک کی

سعید غنی کا لیاری کے اسکولوں کا دورہ، اساتذہ کی حاضری چیک کی

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر) وزیر تعلیم و محنت سندھ سعید غنی نے منگل کے روز اچانک صبح سویرے لیاری کی مختلف اسکولوں اور کالجز کا دورہ کیا اور وہاں اساتذہ کی حاضری اور تدریس کے عمل کا جائزہ لیا۔ صوبائی وزیر نے اسکولوں اور کالجز میں اسمبلی کے انعقاد نہ ہونے اور کالج میں پرنسپل کی وقت پر موجودگی نہ ہونے پر شدید برہمی کا اظہار کیا۔ لیاری کی مختلف اسکولوں اور کالجز میں طلبہ و طالبات کی انرولمنٹ میں کمی پر صوبائی وزیر نے ڈائریکٹر کالجز کو ہدایات دی کہ قریب قریب کالجز اور اسکولوں کا مکمل ڈیٹا مرتب دیا جائے اور جہاں جہاں انرولمنٹ کم ہیں وہاں کالجز اور اسکولوں کو ضم کرنے کے حوالے سے بھی رپورٹ مرتب کرکے انہیں دی جائے۔اسکولز اور کالجز میں صبح 8-30 بجے اسمبلی کے انعقاد کو یقینی بنایا جائے اور جو اساتذہ غیر حاضر یا وقت پر نہیں آتے ان کے خلاف محکمہ ذاتی ایکشن لیا جائے۔ تفصیلات کے مطابق صوبائی وزیر تعلیم و محنت سعید غنی نے منگل کی صبح 8-25 پر لیاری کھڈہ مارکیٹ میں قائم عبداللہ ہارون کالج اور اسکول کا اچانک دورہ کیا۔ اس موقع پر ڈائریکٹر کالجز کراچی حافظ عبدالباری جبکہ پیپلز پارٹی کراچی ڈویژن کے جنرل سیکرٹری و سابق صوبائی وزیر جاوید ناگوری، ڈسٹرکٹ ساؤتھ کے صدر خلیل ہوت اور دیگر بھی ان کے ہمراہ موجود تھے۔ صوبائی وزیر جب کالج پہنچیں تو کالج کے پرنسپل سمیت متعدد اساتذہ غیر حاضر تھے جبکہ وہاں طلبہ بھی موجود نہیں تھے، جس پر صوبائی وزیر نے شدید برہمی کا اظہار کیا۔ صوبائی وزیر نے کالج سے ملحقہ عبداللہ ہارون گورنمنٹ اسکول کا بھی دورہ کیا اور وہاں پر اسمبلی کے انعقاد نہ ہونے پر بھی شدید برہمی کا اظہار کیا اور ہدایات دی کہ روزانہ اسمبلی کے انعقاد کو نہ صرف ممکن بنایا جائے بلکہ اس کی تصاویر اور ویڈیو کلپس بھی انہیں بھیجی جائیں۔ صوبائی وزیر نے وہاں جاری تدریس کے عمل کا بھی جائزہ لیا تاہم طلبہ کی انرولمنٹ کی کمی پر بھی تشویش کااظہار کیا۔ اس موقع پر صوبائی وزیر کو بتایا گیا کہ اسکول میں انرولمنٹ کی کمی کے باعث یہاں کئی کلاسوں کو ضم کرکے چلایا جارہا ہے۔ اس موقع پر انہوں نے موجود افسران کو ہداتات دی کہ کھڈہ مارکیٹ سمیت لیاری اور شہر بھر میں تمام اسکولوں اور کالجز بالخصوص ان اسکولوں اور کالجز کا ڈیٹا آئندہ 1 ہفتہ میں انہیں فراہم کیا جائے جہاں انرولمنٹ کم ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ بھی رپورٹ مرتب کی جائے کہ کن کن کم انرولمنٹ والے اسکولوں اور کالجز کو قریب ترین دیگر اسکولوں اور کالجز میں ضم کرکے وہاں انرولمنٹ پوری کی جاسکتی ہے۔ بعد ازاں صوبائی وزیر نے بیگم نصرت بھٹو کالج کا دورہ کیا۔ اس موقع پر وہاں صفائی ستھرائی کے فقدان اور کلاس رومز میں صفائی نہ ہونے پر شدید برہمی کا اظہار کیا۔ انہوں نے موقع پر موجود ڈائریکٹر کالجز کو ہدایات دی اور فوری صفائی کے احکامات جاری کئے۔

مزید : صفحہ اول