اداروں میں کرپشن اور بے ایمانی، عدلیہ پر چودھری بننے کی اجازت نہیں دینگے: چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ 

 اداروں میں کرپشن اور بے ایمانی، عدلیہ پر چودھری بننے کی اجازت نہیں دینگے: ...

  

 لاہور(نامہ نگارخصوصی)چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مسٹر جسٹس محمدقاسم خان نے یوٹیوب پر عدلیہ کیخلاف پروپیگنڈہ کرنیوالوں کیخلاف ڈی جی ایف آئی اے کو کارروائی کا حکم دیدیاہے،فاضل جج نے ہدایت کی ہے کہ پاکستان بھر کے ٹی وی چینلز پر عدلیہ بارے ریمارکس اور پروگراموں کی تحقیقات بھی کی جائیں جبکہ ڈی جی ایف آئی اے اور صوبہ بھر کے کمشنرز کو ہڑتال میں حصہ لینے والوں کی شناخت کرکے رپورٹ پیش کرنے کاحکم دیا گیاہے،عدالت نے وزیراعلیٰ کی مشیرفردوس عاشق اعوان کو دوبارہ جواب داخل کرنے کی ہدایت کی ہے جبکہ عدالت نے ڈی جی ایف آئی اے کو بیورو کریٹ عظیم شوکت اعوان کے اثاثوں کی چھان بین کرکے رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کیس کی مزید سماعت ایک ماہ کے لئے ملتوی کردی۔چیف جسٹس نے دوران سماعت ریمارکس دیئے کہ تمام ادارے بیورکر یسی کے ہاتھوں میں کھیل رہے ہیں،تمام اداروں میں کرپشن اور بے ایمانی ہے،چیف جسٹس نے متعلقہ حکام سے کہاکہ یا تو ہڑتال کرنیوالوں کو نوکری سے نکال دیں ورنہ توہین عدالت کی کارروائی کروں گا،عدلیہ پر چودھری بننے کی اجازت نہیں دیں گے،عدالت نے آئندہ سماعت کے لئے چیئرمین پیمرا کو حاضری سے استشنٰی دے دیاہے،عدالت میں سول جج اور اسسٹنٹ کمشنر سرگودھا کے درمیان تنازعہ کیخلاف شہری کی درخواست پرسماعت شروع ہوئی تو فاضل جج نے کہا کہ ڈی جی ایف آئی اے معاملہ کی مکمل انکوائری کرکے رپورٹ دیں۔

چیف جسٹس

مزید :

صفحہ آخر -