پنجاب بھر میں 309رمضان بازار لگانے کا فیصلہ 

پنجاب بھر میں 309رمضان بازار لگانے کا فیصلہ 

  

لاہور(جنرل رپورٹر)وزیر اعلیٰ پنجاب کی ہدایت کے مطابق رمضان المبارک میں عام آدمی کو زیادہ سے زیادہ ریلیف کی فراہمی کیلئے پنجاب حکومت نے ماہ مقدس کے دوران صوبے میں 309رمضان بازار قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ فیصلہ رمضان پیکج کیلئے سفارشات تیار کرنے کیلئے قائم کمیٹی کے اجلاس میں کیا گیا۔ اجلاس میں سینئرو وزیر خوراک پنجاب عبدالعلیم خان ویڈیو لنک کے ذریعے شریک ہوئے جبکہ صوبائی وزیر صنعت میاں اسلم اقبال، صوبائی وزیر زراعت حسین جہانیاں گردیزی، چیف سیکرٹری پنجاب، محکمہ زراعت، صنعت، لائیو سٹاک، خوراک کے ایڈمنسٹریٹو سیکرٹر یز، ڈائریکٹر فوڈ، ڈائریکٹر جنرل پبلک ریلیشنز اورکین کمشنر پنجاب نے اجلاس میں شرکت کی۔ اجلاس میں میں اشیاء  ضروریہ کی قیمتوں اور ان پر سبسڈی کی فراہمی سے متعلق مختلف تجاویز پر غور کیا گیا۔کمیٹی کی جانب سے رمضان پیکج کے لئے تیار کی جانیوالی سفارشات کو حتمی منظوری کیلئے پنجاب کابینہ میں پیش کیا جائے گا۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے عبد العلیم خان نے کہا کہ پنجاب حکومت نے تمام شہروں میں گندم و آٹے کی صورتحال کو معمول پر رکھنے کیلئے  ہر ممکن قدم اٹھایا ہے اور وزیر اعظم کی طرف سے گندم درآمد کرنے کا اقدام اس ضمن میں انتہائی فیصلہ کن ثابت ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ رمضان المبارک کے موقع پر بھی پیشگی انتظامات کئے جائیں گے اوررمضان بازاروں میں آٹا مقررہ قیمت سے بھی کم نرخوں پر فراہم کیا جائے گا۔میاں اسلم اقبال نے کہاکہ ماہ مقدس میں عام آدمی کو زیادہ سے زیادہ ریلیف فراہم کرنے کیلئے اقدامات کئے جا رہے ہیں اور صوبہ میں 25شعبان سے 309رمضان بازار لگائے جائیں گے۔حسین جہانیاں گردیزی نے کہا کہ رمضان پیکج کے تحت آٹا، چینی، سبزیاں رعایتی نرخوں پر دستیاب ہوں گی اورمحکمہ زراعت رمضان بازاروں میں فیئر پرائس شاپس قائم کریگا۔چیف سیکرٹری نے افسران کو ہدایت کی کہ رمضان بازاروں میں کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد یقینی بنایا جائے اور اشیائے خورونوش کے معیار، رسد اور قیمتوں کی نگرانی کیساتھ ساتھ صفائی اور دیگر انتظامات پر خصوصی توجہ دی جائے۔ انہوں نے غیر ضروری اخراجات سے گریز کرنے سے متعلق بھی ہدایات جاری کیں۔ انہوں نے کہا کہ رمضان پیکج کے ثمرات عوام تک پہنچانے کیلئے تمام متعلقہ محکمے محنت سے اپنے فرائض سر انجام دیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -