یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز ایک اور کورونا ویکسین کا ٹرائل کریگی

  یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز ایک اور کورونا ویکسین کا ٹرائل کریگی

  

لاہور (جنرل رپورٹر)  یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز ایک اور کورونا ویکسین کا ٹرائل کریگی۔ وائس چانسلر یو ایچ ایس پروفیسر جاوید اکرم کا کہنا ہے کہ چینی ویکسین زیڈ ایف 2001کے انسانی ٹرائل کی منظوری نیشنل بائیو ایتھکس کمیٹی سے مل چکی ہے جبکہ ڈریپ سے منظوری رواں ہفتہ متوقع ہے۔ جمعرات کے روز اس حوالے سے ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ ڈریپ سے منظوری کے بعد آئندہ ہفتے سے رضاکاروں کی بھرتی شروع ہوگی۔ویکسین کو اینہوئی ذیفائی لونگ کام بائیو فارما لمیٹڈ سپانسر کررہی ہے۔ پروفیسر جاوید اکرم نے مزید کہا کہ ویکسین کیلئے ایک ہزار رضاکار رجسٹر کیے جائیں گے۔ویکسین تین ڈوزز پر مشتمل ہوگی۔ویکسین کی ڈوزز تین ماہ کے عرصے میں لگائی جائیں گی۔

تین ماہ میں رضاکاروں کو 7مرتبہ یونیورسٹی آنا پڑے گا۔سفری اخراجات کی مد میں رضاکاروں کو مجموعی طور پر 16ہزار روپے ادا کیے جائیں گے۔پروفیسر جاوید اکرم نے کہا کہ ویکسین ٹرائل کیلئے 18سال سے زائد عمر کے افراد رجسٹر ہوسکتے ہیں۔یہ ٹرائل 18ماہ میں مکمل ہوگا۔ویکسین ٹرائل میں ڈی آر کے فارما سلوشنز کا اشتراک شامل ہے۔ اجلاس میں ویکسین ٹرائل کے فوکل پرسن ڈاکٹر شہنور اظہر، ڈی آر کے فارما کے ڈاکٹر عاطف مرزا، ہیلتھ ورکرز اور چینی ماہرین بھی موجود تھے۔پروفیسر جاوید اکرم نے اپنے خطاب میں مزید کہا کہ یو ایچ ایس کیلئے ریسرچ ہر شے سے بڑھ کر اہم ہے۔ ہم ان تمام ویکسینز کو مقامی لوگوں کیلئے چیک کرنا چاہتے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ نئی ویکسین کین سائنو ویکسین سے مختلف ہے۔ پروفیسر جاوید اکرم نے اس موقع پر کہا کہ اس ٹرائل میں حصہ لینے والے ہر ہیلتھ ورکراور رضاکار کا پیشگی شکریہ ادا کرتا ہوں۔ امید ہے کہ کین سائنو کی طرح زیڈ ایف 2001کے بھی مضر اثرات نہیں ہوں گے۔وی سی یو ایچ ایس کا کہنا تھا کہ نئی چینی ویکسین بھی پروٹین بیسڈ ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -