لاہور سے کوڑا اٹھانے کیلئے 50کروڑ کا ٹھیکہ دینے کی تیاری مکمل، سارمک اور انس برادرز کمپنیاں فیورٹ

لاہور سے کوڑا اٹھانے کیلئے 50کروڑ کا ٹھیکہ دینے کی تیاری مکمل، سارمک اور انس ...

  

 لاہور(جاوید اقبال)لاہور ویسٹ منیجمنٹ کمپنی صفائی کے لئے مستقل انتظامات نہ کر سکی اور تا حال ایڈہاک اور عارضی بنیادوں پر انتظامات چلا رہی ہے جس کے باعث شہر میں صفائی کی صورتحال ابتر ہوچکی ہے،ماضی کی طرح کمپنی نے ایک بار پھر کوڑا اٹھانے کے لئے دو ماہ کا ٹینڈر جاری کیا ہے دو ماہ کے لئے کوڑا اٹھانے کا ٹھیکہ 50 کروڑ میں جاری کیا جائے گا جس کے لئے جنرل منیجر پر کیورمنٹ کی حمایت کے باعث سرگودھا سے تعلق رکھنے والی دو کمپنیوں سارمک اور انس برادرز فیورٹ قرار دی جا رہی ہیں۔ایک ہی مالک کی دونوں کمپنیوں کوعارضی بنیادوں پر پہلے بھی دو مرتبہ ٹھیکہ دیا جا چکا ہے مگر یہ کمپنیاں نتائج دینے میں ناکام رہیں اور شہر گندگی کے ڈھیروں میں تبدیل ہوگیا۔ناگزیر وجوہات کے باعث چودہ کمپنیوں کو نظر انداز کر کے ان دو کمپنیوں کو 25 کروڑ روپے ماہوار پر ٹھیکہ دینے کی تیاری کر لی گئی ہے۔ذرائع کے مطابق ان کمپنیوں کا تجربہ سالڈ ویسٹ مینجمنٹ کا نہیں بلکہ میڈیکل فیلڈ کا ہے۔مگر جب جنرل منیجر پر کیور منٹ اظہر حیات نے ایل ڈبلیو ایم سی میں عہدے کا چارج سنبھالا تو انہیں بھی ساتھ لے آئے اور انہیں دو مرتبہ ایمرجنسی نافذ کر کے کوڑا کرکٹ اٹھانے کا ٹھیکہ دیا۔ذرائع کے مطابق عارضی بنیادوں پر دو ماہ کے لئے پرائمری اور سکینڈری سطح سے کوڑا اٹھانے اور کوڑے کو ڈمپ سائیڈ پر پہنچانے کے لئے ٹینڈر جاری کئے گئے جس میں 16 کمپنیوں نے حصہ لیا تاہم 14کمپنیوں کو نظرانداز کردیا گیا۔گزشتہ روزجب ٹینڈر اوپن ہوا تو ان دو کمپنیوں کی ٹیکنیکل بڈ میں بنک گرانٹی یا سی ڈی آر موجود نہیں تھیں قانونی طور پر انہیں آؤٹ کیا جانا تھا مگر جنرل منیجر نے غیر قانونی طور پر اور پیپرا رولز کی خلاف ورزی کرتے ہوئے انہیں او کے کر دیا۔اس حوالے سے قائم مقام چیف ایگزیکٹیو آفیسر طارق بھٹی سے بات کی گئی تو انہوں نے کہا کہ ٹھیکے میرٹ پر ہوں گے کسی کو تعلقات کی بنا پر ضابطہ کے بر عکس ٹھیکے نہیں ملیں گے خود نگرانی کر رہے ہیں اور صفائی کے نظام میں روزبروز بہتری آرہی ہے۔

کوڑا

مزید :

صفحہ اول -