میلسی‘ 6 ماہ گزرنے کے باوجود  ترقیاتی کام شروع نہ ہوسکے

  میلسی‘ 6 ماہ گزرنے کے باوجود  ترقیاتی کام شروع نہ ہوسکے

  

 میلسی(تحصیل رپورٹر)وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان خان بزدار نے گذشتہ سال ستمبر میں صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ پنجاب جہانزیب خان کھچی کی دعوت پر میلسی کا دورہ کیا(بقیہ نمبر5صفحہ 6پر)

 اور سابقہ حکومت کی جانب سے بنوائے گئے دانش سکول کے افتتاح کے بعد میلسی فدہ ٹاؤن میں ایم این اے اورنگزیب خان کھچی اور جہانزیب خان کھچی کی رہائشگاہ پر منعقدہ عوامی جلسہ کے دوران میلسی کیلئے بڑے ترقیاتی پیکج کااعلان کیا جس میں میلسی شہر میں ریلوے کراسنگ چوک پر فلائی اوور، کالونی روڈ سے ملتان روڈ کے درمیان انڈر پاس کی تعمیر، میلسی میں یونیورسٹی کیمپس کا قیام، سپورٹس اسٹیڈیم کی تعمیر، میلسی بار کیلئے ایک کروڑ روپے اور پریس کلب کیلئے 10 لاکھ روپے کی ترقیاتی گرانٹ، میلسی شہر کی تمام سڑکوں کی از سر نو تعمیراور ہٹھاڑی علاقوں کیلئے نئی نہر نکالنے، میلسی کو ضلع اور ٹبہ سلطانپور کو تحصیل کا درجہ دینے، نیا ٹیکنیکل کالج، شہر کی متاثرہ گلیوں کی تعمیر و مرمت کیلئے 5 کروڑ روپے، ٹبہ سلطانپور میں ٹراما سنٹر، این اے 165 کیلئے 50کلو میٹر نئی سڑکوں کی تعمیر و مرمت کیلئے ترقیاتی فنڈز کے اجراء اور تحصیل کے 7 بڑے قصبات میں سیوریج اور سولنگ کے میگا پراجیکٹس کے اعلانات کیئے وزیر اعلیٰ پنجاب کے دورہ میلسی کو تقریباً 6ماہ گزر چکے ہیں لیکن وزیر اعلیٰ پنجاب کی جانب سے اعلان کیئے گئے کسی بھی منصوبے پر کوئی عملی پیشرفت نہیں ہوئی اور نہ ہی کسی منصوبے کیلئے ترقیاتی فنڈزجاری کیئے گئے ہیں اس بارے صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ پنجاب جہانزیب خان کھچی شہریوں کو متعدد بار ان منصوبوں کے اجراء اور فنڈز کی منظوری کی خوشخبری سنا چکے ہیں لیکن صورتحال جوں کی توں موجود ہے علاقہ بھر کی سڑکیں کھنڈرات میں تبدیل ہو چکی ہیں ترقیاتی کام نہ ہونے کی وجہ سے علاقہ پسماندگی کی منہ بولتی تصویر بنا ہوا ہے شہر میں صحت اور صفائی کے مسائل سنگین نوعیت اختیار کر چکے ہیں اور شہریوں میں روزبروز مایوسی بڑھ رہی ہے اس صورتحال پر تحریک انصاف کے مقامی رہنماؤں اور کارکنوں نے بھی شدید تشویش کا اظہار کیا ہے شہریوں نے وزیرا علیٰ پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اپنے اعلان کردہ تمام منصوبوں کے فنڈز فوری جاری کریں تا کہ علاقے کی محرومیاں دور ہو سکیں۔

ترقیاتی کام

مزید :

ملتان صفحہ آخر -