’اگر پاکستان کے رنز ہی نہ بڑھتے تو میں نے اپنے 100 کا کیا کرنا تھا‘ شاندار کارکردگی دکھانے والے محمد رضوان نے کمال کا انکشاف کر دیا

’اگر پاکستان کے رنز ہی نہ بڑھتے تو میں نے اپنے 100 کا کیا کرنا تھا‘ شاندار ...
’اگر پاکستان کے رنز ہی نہ بڑھتے تو میں نے اپنے 100 کا کیا کرنا تھا‘ شاندار کارکردگی دکھانے والے محمد رضوان نے کمال کا انکشاف کر دیا
سورس: Twitter

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) جنوبی افریقہ کیخلاف پہلے ٹی 20 میچ میں عمدہ سنچری سکور کرنے والے قومی ٹیم کے وکٹ کیپر بلے باز محمد رضوان نے انکشاف کیا ہے کہ میں نے سنچری کا نہیں بلکہ ٹیم کے سکور کو اوپر لے جانے کا سوچا تھا، اگر چاہتا تو ڈبل لے کر سنچری مکمل کرنے کی کوش کرتا مگر پاکستان کا سکور تھوڑا تھا ، تو میں نے اپنی سنچری کا کیا کرنا تھا۔ 

تفصیلات کے مطابق محمد رضوان نے کہا کہ میں نے اننگز کے دوران کبھی 100 کا نہیں سوچا تھا بس یہی ذہن میں تھا کہ پاکستان کا سکور بڑا ہو جائے، میرا 96 اور 98 رنز پر کیچ ڈراپ ہوا لیکن میں نے یہ نہیں سوچا ہوا تھا کہ ڈبل ہو اور سنچری کروں، رنز چونکہ کم تھے اس لئے چوکوں چھکوں کی ضرورت تھی، میں نے اپنے 100 کا کیا کرنا تھا اگر پاکستان کے رنز ہی زیادہ نہ ہوتے، سنچری کا اب مزہ آرہا ہے کہ پاکستان ٹیم میچ جیتنے میں کامیاب ہوئی، میرے 98 یا 99 رنز بھی ہوتے تو مجھے اس کی پراوہ نہ ہوتی۔

قومی ٹیم کے وکٹ کیپر بلے باز محمد رضوان کا کہنا ہے کہ سیریز کے پہلے میچ میں کامیابی سے جہاں اعتماد ملتا ہے وہاں ٹیم کو مومنٹم بھی ملتا ہے۔ ٹیسٹ سیریز جیتنے کے بعد ٹی 20 سیریز کے پہلے میچ میں فتح ملی جس سے کھلاڑیوں کے مورال میں اضافہ ہوا ہے۔ نیوزی لینڈ کے خلاف سیریز کے آخری ٹی 20 میچ میں بھی کامیابی حاصل کی تھی اس لئے میں سمجھتا ہوں کہ مومینٹم بنا ہوا ہے، کوشش ہو گی کہ اس کو آگے لے کر بڑھیں۔ 

واضح رہے کہ محمد رضوان نے پاکستان ٹیم کی جنوبی افریقہ کے خلاف پہلے ٹی 20 میچ کی جیت میں اہم کردار ادا کیا اور پاکستان نے تین رنز سے کامیابی حاصل کی۔ محمد رضوان نے 162.5کے سٹرائیک ریٹ کے ساتھ 64 گیندوں پر 104 رنز کی ناقابل شکست اننگز کھیلی، ان کی اننگز میں 7 چھکے اور 6 چوکے شامل تھے اور وہ مین آف دی میچ قرار پائے۔

مزید :

کھیل -