سینیٹ میں مشترکہ امیدواروں کیلئے کوشاں، تحریک انصاف نے ناپسندیدہ لوگوں کو ٹکٹ دیے، مولانا فضل الرحمان

سینیٹ میں مشترکہ امیدواروں کیلئے کوشاں، تحریک انصاف نے ناپسندیدہ لوگوں کو ...
سینیٹ میں مشترکہ امیدواروں کیلئے کوشاں، تحریک انصاف نے ناپسندیدہ لوگوں کو ٹکٹ دیے، مولانا فضل الرحمان
سورس: Twitter

  

ملتان(ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ مشترکہ امیدوار لانے کی کوشش میں ہیں، تحریک انصاف(پی ٹی آئی) نے جن لوگوں کو سینیٹ کیلئے ٹکٹ دیے وہ ان کی اپنی پارٹی میں بھی ناپسندیدہ ہیں، اسی لیے اوپن بیلٹ کے جتن کیے جا رہے ہیں،لانگ مارچ ایک دن کا نہیں کئی دن ٹھہرنا پڑے گا۔

نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کوشش ہے کہ سینیٹ انتخابات میں ہمارے مشترکہ امیدوار ہوں، مرکزی سطح پر شاہد خاقان عباسی اور راجہ پرویز اشرف کے ساتھ رابطے میں ہیں جبکہ آصف زرداری سے ٹیلی فون پر بات ہوئی ہے۔

انہوں نےکہا تحریک انصاف کے آدھے سے زیادہ امیدوار ان کے اپنے نہیں کسی اور کے ہیں, اس لیے یہ اوپن بیلٹ کے جتن کر رہے ہیں ، جہاں بیلٹ  کالفظ ہوگاوہاں اوپن کاتصور نہیں بلکہ سیکرٹ کاتصور وابستہ ہے، اوپن بیلٹ کے جتن اس لیے کیے جا رہے ہیں کیونکہ وہ جو امیدوار سامنے لا رہے ہیں وہ اپنی ہی پارٹی میں اتنے نا پسندیدہ ہیں کہ انہیں خطرہ ہے کہ ان کے لوگ ہی اِنہیں ووٹ نہیں دیں گے۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ جس گھر میں رشوت دی گئی وہ پی ٹی آئی کا ہے، جس نے رشوت لی اور جس نے رشوت دی وہ بھی پی ٹی آئی کے لوگ ہیں، سارے حقائق قوم کے سامنے آ رہے ہیں، یہ ایک نمائشی قسم کی چیز تھی جس میں نالائقی کے سوا کچھ نہیں تھا۔

اُنہوں نے کہا کہ گرفتار یوں سے حکومت کیلئے مشکلات پیدا ہوں گی،گرفتاریاں سیاسی میدان کا حصہ ہیں،کوئی ہم سے خرید و فروخت کی بات ہی نہیں کرسکتا،عوام کے ووٹوں پر ڈاکہ ڈالنے پر کوئی سمجھوتہ نہیں کریں گے.

مزید :

قومی -علاقائی -پنجاب -ملتان -