بھارت کی غیر ذمہ دارانہ پالیسیوں  سے علاقائی امن کو شدید خطرات لاحق ہیں: ترجمان دفتر خارجہ 

بھارت کی غیر ذمہ دارانہ پالیسیوں  سے علاقائی امن کو شدید خطرات لاحق ہیں: ...
بھارت کی غیر ذمہ دارانہ پالیسیوں  سے علاقائی امن کو شدید خطرات لاحق ہیں: ترجمان دفتر خارجہ 
سورس: ٖFile

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) ترجمان پاکستان دفترخارجہ زاہد حفیظ چوہدری نے کہاہے کہ بھارت کی غیر ذمہ دارانہ پالیسیوں کے باعث علاقائی امن کو شدید خطرات لاحق ہیں، پاکستان اپنی سلامتی اور خطے کی سلامتی کے لئے تمام اقدامات اٹھائے گا۔

ترجمان دفترخارجہ نے ہفتہ وار بریفنگ کے دوران کہا کہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے ایک مرتبہ پھر اقوام متحدہ سیکرٹری جنرل اور صدر سے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر رابطہ کرکے انہیں بھارتی ریاستی دہشت گردی اور لائن آف کنٹرول پر بھارتی جارحیت سے آگاہ کیا اور ان کے سامنے سات مطالبات رکھے جن میں کشمیری رہنماؤں کی رہائی ا ور کالے قوانین کا خاتمہ بھی شامل ہے۔ زاہد حفیظ کا کہناتھا کہ مقبوضہ کشمیر میں 18 ماہ سے کرفیو اور لاک ڈاون ہے، بھارت مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں کر رہا ہے، مقبوضہ کشمیر میں تمام انسانی حقوق سلب ہیں۔مسئلہ کشمیر کے حل نہ ہونے میں بھارتی رویہ رکاوٹ ہے، پوری دنیا بھارت کو دہشتگرد ریاست کے طور پر دیکھتی ہے۔ امریکی سٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کا بیان مقبوضہ کشمیر کی اصل صورتحال اور حقائق کے منافی ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ پاکستان نے ایف اے ٹی ایف پر موثر کام کیا ہے ،27میں سے 21نکات پر عملدرآمد کیا جا چکا ہے۔ پاکستان اپنی سلامتی اور خطے کی سلامتی کے لئے تمام اقدامات اٹھائے گا۔انہوں  نے بتایا کہ وزیراعظم عمران خان رواں ماہ سری لنکا کا دورہ کریں گے۔

انہوں نے بتایا کہ کوہ پیماؤں کی تلاش کے لیے سرچ آپریشن جاری ہے، آئس لینڈ اور چلی کے وزرائے خارجہ نے کوہ پیماوں کے لیے شاہ محمودقریشی سے رابطہ کیا ہے ۔ وزرائے خارجہ کو کوہ پیماوں کی تلاش کے لئے ہر ممکن کوشش کا یقین دلایا ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان اور یو اے ای کے درمیان دوستانہ تعلقات ہیں، وزیراعظم نے عرب امارات کی قیادت سے ٹیلیفون پر رابطہ کیا، دونوں رہنماوں نے پاکستان اور یو اے ای کے تعلقات کی بہتری پر اتفاق کیا۔

مزید :

قومی -