پنجاب حکومت کا ’کارنامہ‘ 25 ارب روپے غائب کردیے، تہلکہ خیز انکشاف

پنجاب حکومت کا ’کارنامہ‘ 25 ارب روپے غائب کردیے، تہلکہ خیز انکشاف
پنجاب حکومت کا ’کارنامہ‘ 25 ارب روپے غائب کردیے، تہلکہ خیز انکشاف
سورس: ٖFile

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان تحریک انصاف کے پنجاب میں اقتدار کے آج ڈھائی سال مکمل ہوگئے ہیں ۔ ان ڈھائی سال کے دوران صوبائی حکومت نے 25 ارب روپے خرچ کئے لیکن حیران کن طور پر ان پیسوں کا کوئی ریکارڈ سرے سے موجود ہی نہیں  ہے۔ 

 نجی ٹی وی 24 نیوز کے مطابق  مالی سال 20-2019کی آڈٹ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پنجاب کے خزانے سے 25 ارب 18 کروڑ روپے خرچ کیے مگر کوئی ریکارڈ ہی نہیں مرتب کیا گیا۔ اس سے پہلے 74 کروڑ روپے کے  فنڈز غائب ہونے کا انکشاف بھی کیا گیا تھا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اربوں روپے کا ریکارڈ غائب ہونا یقینا وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کے لیے ایک امتحان  ہے  کیونکہ اس وقت سوالات پیدا ہورہے ہیں کہ صوبائی اداروں نے پیسے  خرچ کرنے کا ریکارڈ مرتب کیوں نہیں کیا؟ کیا 25 ارب روپے کرپشن کی نذر کردئیے گئے ہیں ؟ وزیراعظم نے کرپشن کے خاتمے کے بڑے بڑے دعوے تو کیے تھے لیکن ڈھائی سال مکمل ہونے کے بعد بھی اتنے بڑے غبن کی تحقیقات نہ ہو سکیں۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -