بجلی کے نئے ٹیرف کے بعد کسی گھر کا بل 2 ہزار سے کم نہیں آئے گا، تہلکہ خیز انکشاف

بجلی کے نئے ٹیرف کے بعد کسی گھر کا بل 2 ہزار سے کم نہیں آئے گا، تہلکہ خیز ...
بجلی کے نئے ٹیرف کے بعد کسی گھر کا بل 2 ہزار سے کم نہیں آئے گا، تہلکہ خیز انکشاف
سورس: Facebook

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) اینکر پرسن ریحان طارق  نے دعویٰ کیا ہے کہ حکومت کی جانب سے  بجلی کی قیمتوں میں اضافہ عالمی مانیٹری فنڈ (آئی ایم ایف) کی شرط پوری کرنے کیلئے کیا گیا ہے اور آئی ایم ایف قرض پروگرام کی بحالی کیلئے 135 ارب روپے کا مزید بوجھ ڈالنے کی منصوبہ بندی بھی  کی جارہی ہے۔

نیپرا نے بجلی ایک روپیہ95 پیسے فی یونٹ مہنگی کرنے کی منظوری دے دی

نجی ٹی وی 24 نیوز کے پروگرام 10 تک میں گفتگو کرتے ہوئے ریحان طارق کا کہنا تھا کہ  نئے ٹیرف تین روپے 95 پیسے کے حساب سے 50 یونٹ استعمال کرنے والے گھر کا بنیادی بل 197 روپے 50 پیسے بنے گا جس میں ٹیکسز، ڈیوٹیز اور دیگر فیسیں شامل ہو کر یہ 391 روپے 66 پیسے تک پہنچ جائے گا۔

بجلی مہنگی ہونے کے بعد گھریلوصارفین کی ٹیرف تفصیلات سامنے آگئیں

انہوں نے کہا کہ اس وقت کوئی بھی صارف 50 یونٹ بجلی استعمال نہیں کرتا  کیونکہ ملک میں دوکمروں کے گھر میں بھی 100 سے زائد یونٹ بجلی کا استعمال کیا جاتا ہے ۔ نئی پالیسی کے تحت ایک سے 100 یونٹ کا ٹیرف 5 روپے 79 پیسے سے بڑھ کر 7 روپے 74 پیسے ہوجائے گا، یوں کسی بھی صارف کا بجلی کا بل  کسی بھی موسم میں دو ہزار روپے سے کم نہیں آئے گا۔

مزید :

بزنس -علاقائی -پنجاب -لاہور -