پی ٹی سی ایل،مضبوط کاروباری حکمت عملی کی بدولت ریونیو میں 7فیصد اضافہ، پوزیشن مزید مستحکم

پی ٹی سی ایل،مضبوط کاروباری حکمت عملی کی بدولت ریونیو میں 7فیصد اضافہ، ...

  

اسلام آباد(پ ر)پاکستان کے صف اول کے ٹیلی کام اور آئی سی ٹی خدمات فراہم کرنے والے ادارے، پاکستان ٹیلی کمیونی کیشن کمپنی لمیٹڈ (پی ٹی سی ایل) نے مارکیٹ میں اپنی پوزیشن مستحکم کرنے والی مضبوط کاروباری حکمت عملی کی بدولت اپنے ریونیو میں 7فیصد(بقیہ نمبر23صفحہ6پر)

 اضافے کا اعلان کیا ہے۔ کمپنی نے 10فروری 2022 کو اپنے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے منعقدہ اجلاس میں سال 2021کے مالیاتی نتائج کا اعلان کیا ہے۔ پی ٹی سی ایل گروپ: پی ٹی سی ایل گروپ نے سال 2021 کے دوران 138ارب روپے کا ریونیو حاصل کیا جو سال2020 کے مقابلے میں 6.3فیصد زائد ہے۔ پی ٹی سی ایل نے اپنے ریونیو میں 7فیصد اضافہ کے ذریعے سالانہ بڑھوتری کی شرح برقرار رکھی جو 2013سے اب تک کا سب سے نمایاں اضافہ ہے۔ پی ٹی ایم ایل (یوفون) نے بھی مارکیٹ میں سخت مسابقت کے باوجود اپنے ریونیو میں 4.3فی صد اضافہ کرلیا۔یو بینک نے اپنی ترقی کی رفتار جاری رکھتے ہوئے آمدن میں 8.4فیصد اضافہ کیا۔ پی ٹی سی ایل گروپ نے 2.6ارب روپے کا خالص منافع حاصل کیا۔ پی ٹی سی ایل: پی ٹی سی ایل نے سال 2021کے دوران مستحکم کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔ پی ٹی سی ایل کی آمدن سال 2021کے دوران 77ارب روپے رہی جو گزشتہ سال کے مقابلے میں 7فیصد زائد ہے،جس کی بڑی وجہ براڈ بینڈ اور کارپوریٹ اینڈ ہول سیل بزنس کے شعبوں میں اضافہ ہے۔ پی ٹی سی ایل نے اس سال 2015کے بعد سے سب سے زیادہ فکسڈ براڈ بینڈ سیلز اور نیٹ ایڈز حاصل کیے جس سے براڈ بینڈ کاروبار کے شعبے میں ترقی ہوئی۔پی ٹی سی ایل سال 2021کے دوران بلند ترین نیٹ ایڈز کی حامل اور سب سے تیزی سے ترقی کرنے والی فائبر ٹو دی ہوم (ایف ٹی ٹی ایچ) آپریٹر رہی۔ کمپنی نے 4.2رب روپے آپریٹنگ منافع کا اعلان کیا ہے جو گزشتہ سال کے مقابلے میں 21فیصد زائد ہے۔  گزشتہ سال کے مقابلے میں خالص منافع 14فیصد کے اضافے سے 6.9ارب روپے رہا۔  کمپنی اپنے موجودہ انفراسٹرکچر اور نیٹ ورک کو مسلسل اپ گریڈ کررہی ہے، اس کے ساتھ ملک بھر میں فائبر ٹو دی ہوم (ایف ٹی ٹی ایچ)میں وسعت لاکر بڑے پیمانے پر صارفین کو بلاتعطل کنکٹویٹی اور بہترین سروسز فراہم کی جارہی ہیں۔ ایف ٹی ٹی ایچ کی تیزرفتاری سے تنصیب اور کارپوریٹ و ہول سیل شعبوں میں مستحکم کارکردگی پی ٹی سی ایل کی ترقی کا گراں قدر باب رہا ہے اور اس کے ساتھ کاسٹ آپٹمائزیشن پروگرام کی بدولت کمپنی کے منافع میں نمایاں اضافہ ہوا۔  پی ٹی سی ایل کنزیومر بزنس: سال 2021 کے دوران کمپنی کا فکسڈ براڈ بینڈ بزنس گزشتہ سال اسی عرصے کے مقابلے میں 11.7فیصد بڑھا جبکہ پی ٹی سی ایل آئی پی ٹی وی سیگمنٹ میں 13فیصد اضافہ ہوا۔ براڈ بینڈ بزنس کے اندر پی ٹی سی ایل کا جدید ترین فلیش فائبر، فائبر ٹو دی ہوم (ایف ٹی ٹی ایچ) سروس میں 61.5فیصد کا شانداراضافہ ہوا۔ جبکہ پی ٹی سی ایل چار جی / وائرلیس براڈ بینڈ سیگمنٹ میں 16.5فیصد اضافہ ہوا۔ وائس ٹریفک میں کمی کی وجہ سے وائس ریونیو میں کمی آئی اوراوور دی ٹاپ)او ٹی ٹی (خدمات کی جانب صارفین کی منتقلی جاری رہی۔ بزنس سروسز:  بزنس سروسزکے باعث مستحکم ترقی جاری رکھتے ہوئے آئی پی بینڈ وتھ، کلاڈ، ڈیٹا سینٹر اور دیگر آئی سی ٹی خدمات کے شعبوں میں اسکی مارکیٹ پوزیشن برقرار رہی۔پی ٹی سی ایل کا انٹر پرائز بزنس گزشتہ سال کے مقابلے میں 10فیصد بڑھا جبکہ کیرئیر اور ہول سیل بزنس میں مسلسل ترقی کا سفر جاری رہا اور مجموعی طور پر ریونیو میں 9فیصد اضافہ ہوا۔اسی طرح بین الاقوامی کاروبار کی ترقی کا حجم 4فی صد رہا۔ پاکستا ن کے قومی ٹیلی کام کیرئیر اور ملکی کنکٹویٹی میں مرکزی کردار کا حامل ادارہ، پی ٹی سی ایل گروپ ڈیجیٹل پاکستان کی جانب سفر میں پیشرفت کے لیے اپنے جدید ترین ٹیلی کمیونی کیشن انفراسٹرکچر اور متنوع خدمات کے پورٹ فولیو کی مدد سے جدت انگیز سہولیات کی فراہمی میں مصروفِ عمل ہے، جس سے صارفین کو بہترین ٹیلی کام خدمات سے مستفید ہونے کا موقع حاصل ہے۔  پی ٹی ایم ایل۔ یوفون: مشکلات سے بھرپور آپریٹنگ ماحول کے باوجود یوفون کے مالیاتی سال 2021 کا اختتام مثبت طریقے سے ہوایوفون کے ریونیوز میں سال 2020کے مقابلے میں 4.3فی صد اضافہ ہواجو بنیادی طور پر ڈیٹا سروسز کی ترقی کے مرہونِ منت ہے۔ یوفون نے ستمبر 2021 میں این جی ایم ایس (NGMS)اسپیکٹرم کی نیلامی میں 1800 میگا ہرٹز کے بینڈ میں اضافی 9 میگا ہرٹز کا 4Gاسپیکٹرم حاصل کیا تاکہ پاکستان بھر میں اپنی معیاری خدمات کے ذریعے صارفین کو بہترین سروسز کی فراہمی کے عزم کی تکمیل کی جائے۔ اسپیکٹرم نیلامی کے بعد سال 2021کی چوتھی سہ ماہی کے دوران نیٹ ورک کو جدت سے ہم آہنگ کرنے کے لیے اہم اقدامات اٹھائے گئے۔  پی ٹی سی ایل گروپ یونیورسل سروس فنڈ کی ان کوششوں کو تقویت پہنچا رہا ہے جن کے تحت ٹیلی کمیونی کیشن سہولیات سے جزوی یا پوری طرح محروم علاقوں کو یہ خدمات مہیا کی جارہی ہیں۔ اس سال پی ٹی سی ایل کو پنجاب، خیبر پختونخواہ اور سند ھ کے دور افتادہ علاقوں میں سات یو ایس ایف آپٹیکل فائبر منصوبے تفویض کیے گئے۔ ان منصوبوں کے تحت پی ٹی سی ایل کی جانب سے 4690کلومیٹر آپٹیکل فائبر بچھائی جائے گی۔ یوفون کو 2021میں براڈ بینڈ فار سسٹین ایبل ڈویلپمنٹ (بی ایس ڈی) کے تحت پانچ یو ایس ایف منصوبے تفویض ہوئے، جن کے تحت بلوچستان کے دورافتادہ ٹیلی کام سہولیات سے محروم اضلاع میں انٹرنیٹ کی فراہمی اور 205بی ٹی ایس سائٹس کو اپ گریڈ کرنا شامل ہیں۔  یو بینک: یو بینک، پی ٹی سی ایل کا مائیکروفنانس اور برانچ لیس بینکنگ کا ذیلی ادارہ ہے جس نے اپنے ایڈوانس پورٹ فولیو میں بہتری لاتے ہوئے گزشتہ سال کے مقابلے میں 8.4فیصد ریونیو اضافے سے اپنی ترقی کا سفر جاری رکھا۔بینک کی جانب سے باٹم لائن اثرات کو یقینی بناتے ہوئے اپنے فنڈنگ کے ذرائع اور اثاثہ جات کی کلاسز بڑھائے جانے کے بعد اس کی بیلنس شیٹ 100ارب روپے سے تجاوز کرگئی ہے۔ بینک کی جانب سے قابل ذکر اہم اقدامات میں سستے گھر، بین الاقوامی سطح پر ترسیلات زر، اور اسلامی بینکاری کے شعبوں میں نئے منصوبے شامل ہیں۔ بینک کا ارادہ ہے کہ ٹیکنالوجی میں سرمایہ کاری کی جائے تاکہ ڈیجیٹل بینکنگ کے میدان میں زیادہ سے زیادہ مواقع دستیاب ہوں۔ مائیکرو فنانس کے اپنے بنیادی مشن کے پیش ِنظر بینک نئے شعبوں اور صارفین کے نئے طبقوں کو خدمات فراہم کرنے پر توجہ مرکوز کیے ہوئے ہے تاکہ مالیاتی خدمات تک رسائی بڑھانے کے اپنے مشن کے تحت زیادہ سے زیادہ پاکستانیوں کو بینکاری نظام میں شامل کیا جاسکے۔  کاروباری سماجی ذمہ داری (سی ایس آر)  سال 2021میں پی ٹی سی ایل نے خصوصی افراد کے لیے اپنے معروف انٹرن شپ پروگرام جستجو کا دوسرا کوہارٹ نیٹ ورک آف آرگنائزیشنز ورکنگ ود پرسنز ود ڈس ایبلیٹز (NOWPDP)کے تعاون سے مکمل کرلیا۔ پی ٹی سی ایل نے پاکستان کے تعلیمی شعبوں کی مدد کے لیے پہلی کرن سکولوں کے 11کیمپسز کو انٹرنیٹ کنکٹویٹی فراہم کی۔پی ٹی سی ایل رضاکار اور کمپنی ملازمین کی وولنٹیئر فورس نے اخوت کلاتھ بینک کے تعاون سے پاکستان بھر میں کپڑوں کی عطیات کی مہم چلائی۔شوکت خانم میموریل کینسر ہسپتال و ریسرچ سینٹر نے 2020 میں کورنا وبا کی شدید ترین لہر کے دوران پی ٹی سی ایل رضا کار ٹرسٹ کی جانب سے کورونا سے بچا کی کوششوں کی اعانت اورٹیسٹنگ سہولیات کی فراہمی کے لیے خطیرعطیات کا خیر مقدم کیا۔

مستحکم

مزید :

ملتان صفحہ آخر -