4دہشتگردوں کا جوڈیشل ریمانڈ منظور، جیل بھجوانے کا حکم

4دہشتگردوں کا جوڈیشل ریمانڈ منظور، جیل بھجوانے کا حکم

  

ملتان (خصو صی  رپورٹر) انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت ملتان نے کالعدم تنظیم داعش اور تحریک طالبان پاکستان سے تعلق رکھنے والے 4 دہشت گردوں کا جوڈیشل ریمانڈ منظور کرتے ہوئے جیل بھجوانے کا حکم دیا ہے۔ کانٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ نے 3 فروری کی رات جنوبی پنجاب کے متعدد علاقوں میں کارروائیاں کرتے ہوئے 4 ریڈ کیے اور اس دوران مختلف مقامات سے پانچ ملزمان پکڑے گئے، ملزمان کے خلاف مقدمات نمبر 4،5،6،7 /22 کا اندراج کیا گیا تھا۔سی ٹی ڈی کی جانب سے  مبینہ دہشت گردوں عمران حیدر اور ریاض(بقیہ نمبر26صفحہ6پر)

 احمد کو میاں چنوں سے گرفتار کیا گیا ملزمان سے ہینڈ گرنیڈ اور بھاری مقدار میں ممنوعہ اسلحہ برآمد ہوا تھا۔ اسی طرح ملزم شوکت علی ایک کالعدم تنظیم کے سرگرم کارکن تھا جو لوگوں کی ذہن سازی کررہا تھا، اسی طرح ملزم محمد عرفان عرف عبدالرحمن کو ملتان کے علاقے نگانہ چوک سے گرفتار کیا گیا جس کا تعلق کالعدم ٹی ٹی پی سے بتایا گیا ہے ملزم ایک شاطر اور چالاک آدمی ہے۔ تاہم عدالت نے مذکورہ چاروں ملزمان کا جوڈیشل ریمانڈ منظور کرتے ہوئے 24 فروری کو مقدمہ کے چالان سمیت عدالت پیش کرنے کا حکم دے دیا ہے۔ دوسری جانب ملزم محمد ہاشم جس کو نادرن بائی پاس ملتان سے گرفتار کیا گیا اس کا تعلق لشکر جھنگوی سے بتایا گیا دہشت گرد حساس مقامات کو نشانہ بنانا چاہتا تھا جس کا 12 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کیا گیا تھا مذکورہ ملزم کو جسمانی ریمانڈ ختم ہونے پر 16 فروری کو عدالت پیش کیا جائے گا انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت ملتان نے کالعدم تنظیم سے تعلق رکھنے والے شخص کا ممنوعہ کتابیں رکھنے کے مقدمہ میں 7 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرتے ہوئے سی ٹی ڈی کے حوالے کرنے کا حکم دیا ہے۔ قبل ازیں فاضل عدالت میں پولیس تھانہ سی ٹی ڈی کے مطابق ملزم محمد ایاز کو سورس رپورٹ پر تحویل میں لیا گیا ملزم کا تعلق ملتان شیر شاہ کے علاقے سے ہے جس سے کالعدم قرار دی گئی کتابیں برآمد ہوئیں جو معاشرے میں نفرت پھیلانے کا سبب بن رہی ہیں جس پر ملزم کے خلاف مقدمہ نمبر 10 درج کیا گیا تاہم عدالت نے ملزم کا جسمانی ریمانڈ منظور کرتے ہوئے 17 فروری کو دوبارہ عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیا ہے 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -