باچا خان یونیورسٹی چارسدہ،سلیکشن بورڈ کا انٹرویو کا انوکھا انداز

      باچا خان یونیورسٹی چارسدہ،سلیکشن بورڈ کا انٹرویو کا انوکھا انداز

  

چارسدہ (بیورورپورٹ)باچا خان یونیورسٹی میں تدریسی عملے سمیت دیگر عہدوں کے لیے امیدواروں کے انٹرویو کے دوران سلیکشن بورڈ کا انوکھا انداز۔انٹرویو سے پہلے امیدواروں کی تصویر کھینچ کر ان سے دستخط لیے جاتے ہیں کہ وہ عدالت یا کسی اور فورم پر بھرتی کو چیلنج نہیں کریں گے۔تفصیلات کے مطابق باچا خان یونیورسٹی میں لیکچرر ز،اسسٹنٹ پروفیسرز، ایسوسی ایٹ پروفیسر اور انتظامی پوسٹوں پر بھرتی کے لیے انٹرویو کا سلسلہ جاری ہے۔دلچسپ امر یہ ہے کہ سلیکشن بورڈ کے سامنے جب امیدوار انٹرویو کے لیے پیش ہوتے ہیں تو ان کی تصویر کھینچ کر ان سے دستخط لیے جاتے ہیں کہ وہ بھرتی کے حوالے سے عدالت یا کسی اور فورم سے رجوع نہیں کریں گے۔انٹرویو دینے والے بعض امیدواروں نے نام نہ بتانے کے شرط پر بتایا کہ دال میں کچھ کالا ضرور ہے کیونکہ انہوں نے پہلی بار سرکاری نوکری کے لیے انٹرویو دیتے وقت ایسا منظر دیکھا ہے۔ انٹرویو دینے والوں میں یونیورسٹی کے بعض کنٹریکٹ ملازمین بھی شامل ہیں اور وہ کنٹریکٹ ختم کرنے کے خوف سے زبان بند کیے ہوئے ہیں۔اس حوالے سے موقف معلوم کرنے کے لیے باچا خان یونیورسٹی کے ترجمان سے رابطہ کیا گیامگر موصوف نے کوئی جواب نہیں دیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -