اپنی منگیتر کی قبر پر اظہار محبت نوجوان کو مہنگا پڑگیا، بڑا جھٹکا لگ گیا

اپنی منگیتر کی قبر پر اظہار محبت نوجوان کو مہنگا پڑگیا، بڑا جھٹکا لگ گیا
اپنی منگیتر کی قبر پر اظہار محبت نوجوان کو مہنگا پڑگیا، بڑا جھٹکا لگ گیا
سورس: Facebook

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ میں اپنی منگیتر کی قبر پر پھولوں کے پودوں والا لکڑی کا باکس رکھنے کی پاداش میں دل گرفتہ شخص کو گرفتار کر لیا گیا۔میل آن لائن کے مطابق امریکی ریاست الباما کے شہر اوپیلیکا کے رہائشی31سالہ ونچیسٹر ہیگنز نامی یہ شخص اپنی 26سالہ منگیترہینا فورڈ کی ناگہانی موت پر ہی سخت صدمے سے دوچار تھا، جو گزشتہ سال ایک کار حادثے میں موت کے منہ میں چلی گئی تھی۔ 

ونچیسٹر نے ہینا کی محبت میں ایک لکڑی کا باکس بنوایا اور اس میں مٹی ڈال کر پھولوں کے پودے لگوا دیئے۔ اس باکس کے ایک طرف اس نے شیشے کے فریم بنوا کر ان میں اپنی اور ہینا کی تصاویر جڑوائی تھیں اور دوسری طرف ایک تحریر کندہ کرائی تھی جس میں اس نے ہینا کے ساتھ اپنی محبت کا اظہار کیا تھا۔ یہ باکس اس نے لیجا کر ہینا کی قبر پر رکھ دیا تاکہ اس کی قبر پر تازہ پھول کھلے رہیں۔

تاہم ونچیسٹر کا یہ کام ہینا فورڈ کے باپ ٹام فورڈ کو پسند نہیں آیا اوراس نے ونچیسٹر کے خلاف پولیس کو اپنی بیٹی کی قبر پر ’کچرا‘ پھیلانے کے الزام میں رپورٹ درج کرا دی جس پر پولیس نے ونچیسٹر کو گرفتار کر لیا۔ ونچیسٹر کا کہنا ہے کہ اسے گرفتاری کے بعد معلوم ہوا کہ اس کے وارنٹ گرفتاری پر ہینا کے باپ نے دستخط کیے تھے۔ اس نے بتایا کہ ”میرے خلاف پولیس کو رپورٹ کرنے سے قبل ہینا کے باپ نے مجھے سے رابطہ نہیں کیا اور پھولوں کے باکس کے متعلق بات نہیں کی تھی ورنہ ہم پولیس کی مداخلت کے بغیر بھی اس مسئلے کا حل نکال سکتے تھے۔“ فورڈ فیملی نے اس معاملے پر ردعمل دینے سے انکار کر دیا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -