محکمہ صحت، بائیو میٹرک کا سسٹم فلاپ، ملازمین کی بوگس حاضریاں

محکمہ صحت، بائیو میٹرک کا سسٹم فلاپ، ملازمین کی بوگس حاضریاں

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 ملتان(وقائع نگار)محکمہ صحت افسران کی مبینہ ملی بھگت،ڈسٹرکٹ ملتان کے مختلف ہیلتھ فیسیلٹیز سنٹرز پر حاضری کیلئے لگایا جانیوالا بائیو میٹرک سسٹم فلاپ ہوگئی۔ہیلتھ سنٹرز کے قریب رہنے والے ملازمین نے اپنے انگوٹھے مشینوں میں فیڈ کرالئے،دیگر ملازمین کی بائیو میٹرک حاضریاں بوگس لگنے لگیں،مانیٹرنگ کیلئے آنے والے افسران تحفے تحائف نذرانے لیکر سب اچھا کی رپورٹ دینے لگے۔تفصیل کے مطابق محکمہ صحت پنجاب گورنمنٹ نے ڈسٹرکٹ ملتان کے تمام بی ایچ یوز، آر سی ایچ،ٹی ایچ کیو اور ڈی ایچ کیو میں ہیلتھ ملازمین کی حاضری کو بر(بقیہ نمبر37صفحہ7پر )

وقت یقینی بنانے کیلئے لاکھوں روپے فنڈز خرچ کرکے بائیو میٹرک سسٹم فعال کیا جس پر ڈاکٹرز اور ملازمین کی یونین نے مخالفت کی،سسٹم کو فیل کرنے کیلئے محکمہ صحت کی آنکھوں۔ میں دھول جھونکنے ہوئے ہیلتھ سنٹرز بی ایچ یو مہمند ہور،چک 5 فیض و دیگر سنٹرز پر مخصوص ملازمین جو کہ انہی سنٹرز کے قریب ہی رہائش پذیر ہیں اپنے دونوں ہاتھوں اور انگلیوں کے انگوٹھے مشینوں میں فیڈ کردیے اور سینئر و جونئر ڈاکٹر اور ملازمین کی حاضری افسران کی مبینہ ملی بھگت سے خود لگاتے ہوئے چشم پوشی کرنے لگے ایک ہی ملازم کئی کئی ملازمین کی حاضری لگا رہا ہے اور دیگر ملازمین ڈیوٹی پر یا تو آتے ہی نہیں یو فر بہت لیٹ آتے ہیں تمام بوگس حاضری سسٹم کو چیک کرنے کیلئے آنے والے ہیلتھ افسران کو تحفے تحائف نذرانے دیکر چپ کرایا جاتا ہے اور ملازمین کی حاضری کیلئے سب اچھا کی رپورٹ جاری کردی جاتی ہے۔اس طرح سے ہیلتھ افسران اور سنٹرز پر میڈیکل آفیسرز نے چشم پوشی اختیار کر رکھی ہے ۔عوامی حلقوں نے اعلی حکام سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے