ہنڈی کے ذریعے رقوم کی پاکستان منتقلی حکومت کی کمزوری ہے،میاں مقصود

ہنڈی کے ذریعے رقوم کی پاکستان منتقلی حکومت کی کمزوری ہے،میاں مقصود

  

لاہور(نمائندہ خصوصی)امیرجماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمد نے میڈیا کی رپورٹس جن میں انکشاف کیا گیا ہے کہ ’’ہرسال15ارب ڈالر ہنڈی کے ذریعے بیرون ممالک مقیم پاکستانی اندرون ملک بھجواتے ہیں‘‘پرتشویش کا اظہارکرتے ہوئے اسے حکومتی کمزور معاشی پالیسیوں کا نتیجہ قرار دیا ہے۔انہوں نے کہاکہ گزشتہ5برسوں میں 2 کھرب 91 ارب 17کروڑڈالربیرون ممالک منتقل کیے گئے ۔ 2011 میں 49 ارب20کروڑ30لاکھ ڈالر ، 2012 میں 54 ارب73کروڑ90لاکھ ڈالر ،2013 میں 54 ارب 19کروڑ 60 لاکھ ڈالر ،2014 میں 63 ارب 81 کروڑ 90لاکھ ڈالر ، 2015میں سب سے زیادہ زرمبادلہ 64ارب22کروڑ ڈالر باہر منتقل ہوئے۔ انہوں نے کہاکہ ٹیکس ایمنسٹی اسکیم اس بات کاثبوت ہے کہ وزارت خزانہ اپنی تمام ترکوششوں کے باوجود ٹیکس نیٹ بڑھانے میں بری طرح ناکام ہوئی ہے جبکہ ان ٹیکسوں کابوجھ غریب عوام پر بڑھادیا گیا ہے۔یہی وجہ ہے کہ ہنڈی کاکاروبار عروج پر پہنچ چکا ہے جبکہ حکومت اس کی روک تھام کے لئے کچھ نہیں کررہی۔ انہوں نے کہاکہ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی جانب سے غیر قانونی طریقے سے رقوم باہر سے اندرون ملک بھجوانے کے ساتھ ساتھ اندرون ملک سے غیر قانونی طور پر اربوں ڈالر سالانہ ہنڈی کے ذریعے ملک سے باہر بھجوائے جارہے ہیں جوکہ لمحہ فکریہ ہے۔پاکستان کی چین سے ظاہر شدہ امپورٹ تقریباً سالانہ7ارب ڈالر تک پہنچ گئی ہے جبکہ معاشی ماہرین کے مطابق چین سے پاکستانی امپورٹ د ر ا صل 10ارب ڈالر سے زائد ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -