سعودی عرب اور ایران کے درمیان کشیدگی شام بحران کے حل کیلئے کوششوں پر اثرانداز نہیں ہوگی،اقوام متحدہ

سعودی عرب اور ایران کے درمیان کشیدگی شام بحران کے حل کیلئے کوششوں پر ...

  

نیو یارک (اے پی پی) اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے برائے شام سٹیفن ڈی مسٹورا نے کہا ہے کہ سعودی عرب اور ایران کے درمیان کشیدگی سے مسئلہ شام کے حل کیلئے کی جانے والی کوششوں پر اثرات مرتب نہیں ہونگے ۔ تہران میں علاقائی مشاورتی اجلاس کے اختتام کے بعد صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے نے کہا کہ سعودی عرب اور ایران کے درمیان کشیدگی شام کے بحران کے حل کیلئے کوششوں پر اثرانداز نہیں ہوگی۔ انہوں نے بتایا کہ ان کی ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف کے ساتھ اس بارے سیر حاصل گفتگو ہوئی ہے جبکہ نائب وزیر خارجہ حسین امیر عبداللہ سے بھی شام بارے تبادلہ خیال کیا گیا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ انہوں نے شام بارے ایرانی قیادت کو اپنے دورہ سعودی عرب سے آگاہ کیا ہے اور دونوں فریقین نے شام کے بحران کے حل کے بھر پور تعاون کی یقین دہانی کرائی ہے۔ شام کے بحران کے بارے سیاسی مذاکرات کا آغاز25جنوری کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں ہوگا۔ اس بارے سلامتی کونسل پہلے بھی ایک قرار داد منظور کر چکی ہے۔جس کے مطابق شام کے بحران کے حل کیلئے 2012ء کے جنیوا مذاکرات کی بنیادوں پر بات آگے بڑھائی جائے گی۔

اس سلسلے میں انٹر نیشنل سیر یا سپورٹ گروپ کی سفارشات کو اہمیت دی جائیگی۔

مزید :

عالمی منظر -