وزیربلدیات کی نام نہاد صفائی مہم کو بے نقاب کرینگے،خواجہ اظہار

وزیربلدیات کی نام نہاد صفائی مہم کو بے نقاب کرینگے،خواجہ اظہار

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر) سندھ اسمبلی میں قائد حزب اختلاف خواجہ اظہارالحسن نے کہا ہے کہ ایم کیو ایم کی پالیمانی پارٹی نے اپنے اجلاس میں فیصلہ کیا ہے کہ سندھ کے وزیر بلدیات کی نام نہاد صفائی مہم کو عوام کے سامنے بے نقاب کیا جائے گا تاکہ عوام کو بتایا جاسکے کہ صفائی مہم کے نام پر انہیں دھوکہ دیا جارہا ہے پیر کو سندھ اسمبلی بلڈنگ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ اظہار نے کہا کہ کچھ عرصے قبل ایک ملک بدر وزیر بلدیات نے بھی ایسی ہی صفائی مہم شروع کی تھی اس وقت بھی صفائی مہم کے نام پر پیٹرول اور ڈیزل کے پیسے اڑائے جارہے ہیں اور عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کے لئے صرف فوٹو سیشن کرائے جارہے ہیں۔ قائد حزب اختلاف نے سوال کیا کہ یہ صفائی مہم ہمیشہ صرف کراچی میں ہی کیوں شروع کی جاتی ہے ،کیا خیرپور، حیدرآباد اور دوسرے شہروں میں صفائی کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ رینجرز آپریشن پورے صوبے میں ہونا چاہیے کیونکہ اس وقت ملک بھر میں نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد ہورہا ہے اور کراچی ایکشن پلان نام کی کوئی چیز نہیں ہے اس لئے آپریشن صرف کراچی تک کیوں محدود رہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر وفاق پورے سندھ میں آپریشن شروع کرے تو اس کا ساتھ دیں گے۔ سندھ میں پیپلز پارٹی کی حکومت کے خلاف قائم ہونے والے والے گرینڈ اپوزیشن الائنس سے متعلق قائد حزب اختلاف کا کہنا تھا کہ اس اتحاد کوکہیں نہ کہیں عوامی منڈیٹ اور سپورٹ تو ہے لیکن یہ افسوس کی بات ہے کہ گرینڈ الائنس کی جانب سے اب تک سندھ کے بلدیاتی اداروں کو بااختیار بنانے سے متعلق کچھ نہیں کہا گیا نہ اتحاد نے یہ بات اپنے ایجنڈے میں شامل کی ہے۔دریں اثناء ایم کیو ایم کے اراکین سندھ اسمبلی نے پیر کو اسمبلی سکریٹریٹ مین سالٹ مینجمنٹ ترمیمی بل جمع کرایا جبکہ ایک قرارداد کا مسودہ بھی جمع کرایا ہے جس میں حکومت سے مردم شماری کے لئے کہا گیا ہے قرارداد میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ سندھ میں خانہ شماری کا عمل جہاں بند ہوا تھا اسے وہیں سے شروع کیا جائے تاکہ آبادی کا درست تخمینہ لگایا جاسکے۔

مزید :

کراچی صفحہ آخر -