پولیس کا پرامن شہریوں پر تشدد قا بلِ مذمت ہے ،حافظ نعیم الرحمن

پولیس کا پرامن شہریوں پر تشدد قا بلِ مذمت ہے ،حافظ نعیم الرحمن

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر) جماعت اسلامی کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمن نے ٹریفک پولیس اہلکار وں کے ہاتھوں پی آئی ڈی سی کے قریب پر امن شہری شفیق پر تشدد اور آرٹلری میدان تھانے میں ایک شہری کی جانب سے اپنی موٹر سائیکل واپس لینے جانے پرتھانے میں موجود پولیس اہلکاروں کااس شخص پر تشدد کے واقعات پر اپنی گہری تشویش کا اظہار کر تے ہوئے ان کی سخت مذمت کی ہے اور کہا ہے کہ جب قانون کے رکھوالے ہی قانون کی خلاف ورزی اور تشدد کا راستہ اختیار کریں گے تو شہریوں سے قانون کی پاسداری کی توقع کیسے کی جاسکے گی ۔انہوں نے کہا کہ قانون کی خلاف ورزی پولیس اہلکاروں کا معمول بن گیا ہے ۔وی آئی پی پروٹوکول کے نام پر شہرکی اہم شاہراہوں کو بند کر کے شہریوں کو گھنٹوں کھڑے رہنے پر مجبور کر دیا جاتا ہے ۔پولیس کا یہ طرزِ عمل خود عوام کے اندر غصہ اور بے چینی پیدا کر نے کا سبب ہے ۔عوام کو خود تشدد پر اُبھارا جارہاہے ۔عوام کے ٹیکسوں پر چلنے والے اداروں کے اہلکار عوام پر ہی تشدد کر رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ پولیس اور ٹریفک پولیس شہریوں سے جو ہتک آمیز سلوک کر تی ہے وہ کسی سے چھپا نہیں مگر آج تک پولیس کا نظام درست کر نے اور ان اہلکاروں کا عوام سے روا رکھا جانے والے سلوک کی اصلاح کی کوشش نہیں کی گئی اگر پولیس اہلکاروں کا یہ طرزِ عمل برقرار رہا تو عوام بھی ردِ عمل کا شکار ہو سکتے ہیں ۔دریں اثناٹریفک پولیس اہلکاروں کے ہاتھوں شفیق پر تشدد کی اطلاع ملتے ہی جماعت اسلامی کے رہنماء راجہ عارف سلطان دیگر رہنماؤں کے ہمراہ تھانہ سول لائن پہنچے اور واقعے کی تفصیلات معلوم کیں ۔انہوں نے واقع کی شدد مذمت کی اور شفیق کی رہائی کے لیے پولیس اہلکاروں سے ملاقات کی ،بعد ازاں شفیق کو شخصی ضمانت پر رہا کر دیا گیا ۔

مزید :

کراچی صفحہ آخر -