حکومت رضاکارانہ ٹیکس سکیم قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ سے پاس کروانے میں ناکام

حکومت رضاکارانہ ٹیکس سکیم قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ سے پاس ...
حکومت رضاکارانہ ٹیکس سکیم قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ سے پاس کروانے میں ناکام

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) حکومتی ارکان قومی اسمبلی اور ایف بی آر حکام تمام ترجتن کرنے کے باوجود رضاکارانہ ٹیکس سکیم بل قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ سے پاس کروانے میں ناکام ہوگئے ۔ رشید گوڈیل نے کہا ہے کہ حکومت ایمنسٹی سکیم کے تحت چوروں اور لٹیروں کو پروان چڑھا رہی ہے رضا کارانہ ٹیکس سکیم کی سخت مخالفت کرتے ہوئے انہوں نے مزید کہا کہ گزشتہ ایمنسٹی سکیموں کی طرح یہ بھی ناکام ہو جائے گی کیونکہ حکومت صرف خاص طبقے کو نواز رہی ہے۔ پیپلز پارٹی کی ممبر قومی اسمبلی ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے کہا ہے کہ ایک خاص طبقے کیلئے ایمنسٹی سکیم لانا آئین کی خلاف ورزی ہے ۔

قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ ، ریونیو، اقتصادیاتی امور، اعدادو شماراور نجکاری کا اجلاس پیر کے روز قیصر احمد شیخ کی زیر صدارت شروع ہوا جس میں ممبر ز قائمہ کمیٹی رانا شمیم احمد ، دانیال عزیز، سعید احمد منہاس، پرویز ملک، سردار جعفر لغاری ، عالم داد لالیکا، میاں عبدالمنان ، ڈاکٹر نفیسہ شاہ ، ناصر خان خٹک، مراد سعید اور عبدالرشید گوڈیل نے شرکت کی۔

اجلاس میں حکومت کی طرف سے متعارف کرائے گئے رضا کارانہ ٹیکس سکیم بل پر بحث شروع کی گئی جس پر اپوزیشن ارکان اسمبلی اورممبر کمیٹی نے موقف اختیار کیا کہ بل کو بحث کیے بغیر پا س کرنا غیر آئینی ہے اور ایمنسٹی سکیم کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ حکومتی چال ہے کہ ایک خاص طبقہ کو موقع فراہم کیا جائے تاکہ وہ کالے دھن کو سفید کریں ۔

چیئرمین کمیٹی قیصر احمد شیخ نے بل پر ووٹنگ کرانے کی کوشش کی جس پر اپوزیشن ارکان نے واک آﺅٹ کرنے کی دھمکی دیدی۔ حکومتی ارکان اسمبلی اور ممبران قائمہ کمیٹی نے اپوزیشن کو اعتماد میں لینے کی کوش کی مگر ڈاکٹر نفیسہ شاہ اور رشید گوڈیل نے بل پاس کرنے سے انکار کر دیااورگزشتہ تمام ایمنسٹی سکیموں کی تفصیلات مانگ لیں اور اس کے بعد فیصلہ کرنے کو کہا ۔ چیئرمین ایف بی آرنثار محمد خان نے اعتراف کیا کہ 1997 ءمیں پیش کیا گیا ایمنسٹی سکیم کا منصوبہ ناکام ہو گیا تھا۔

چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے خزانہ قیصر احمد شیخ نے بل کے بارے میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ رضاکارانہ طورپر ٹیکس سکیم کوئی آئیڈیل سکیم نہیں ہے اور اس میں بے پناہ غلطیاں ہیں جس سے کچھ لوگ فائدہ اٹھانے میں کامیاب ہو جائیں گے ، ان کا مزید کہنا تھا کہ حکومت اور ملک کو ریونیو کی ضرورت ہے براہ کرم اسے مشترکہ طور پر پاس کیا جائے۔

مزید :

قومی -