پی پی کی مرکزی قیادت کو کراچی میں گٹر بند ہونے پر سازش کی ”بو“ آنے لگی

پی پی کی مرکزی قیادت کو کراچی میں گٹر بند ہونے پر سازش کی ”بو“ آنے لگی
پی پی کی مرکزی قیادت کو کراچی میں گٹر بند ہونے پر سازش کی ”بو“ آنے لگی

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) پیپلز پارٹی کی مرکزی قیادت کو کراچی میں گٹر بند ہونے کے معاملے میں سازش کی بو آنے لگی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ کراچی میں گٹروں کا ابلنا سازش بھی ہوسکتی ہے سکھر میں بھی سازش کے تحت گٹر بند کردیے جاتے تھے اس حوالے سے تحقیقات ہونی چاہئیں۔

وزیر اعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ نے ملیر بار کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کراچی میں ایک ساتھ گٹروں کا ابلنا سندھ حکومت کیخلاف سازش ہے۔

سندھ کے سینئر وزیر نثار کھوڑونے این ای ڈی یونیورسٹی کے کتب میلہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ کراچی کے گٹروں سے ڈھکن اچانک غائب کیسے ہوگئے،گٹراور سیاست ایک ساتھ نہیں چل سکتے،2 کروڑ کی آبادی کے شہر میں گٹر کے 40 ڈھکن لگانامذاق ہے۔ یوسف رضاگیلانی نے طلبہ یونین کی بحالی کااعلان کیا،معاملہ آگے نہ بڑھ سکا،تعلیمی اداروں میں طلبہ یونین کوبحال ہونا چاہیے،اپوا گرلزکالج کی نئی عمارت کھنڈرکیسے بنی،تحقیقات کرائیں گے۔

وزیر بلدیات سندھ جام خان شورو کا کہنا ہے کہ بوریاں رکھ کر گٹر بند کیے گئے جس کی تحقیقات کررہے ہیں۔

واضح رہے کہ عالمگیر خان نامی شہری نے ” فکس اٹ“ نام سے شہر قائد میں گٹروں کے ڈھکن لگانے کیلئے مہم چلارکھی ہے جسے مین سٹریم میڈیا اور سوشل میڈیا پر خوب پذیرائی حاصل ہورہی ہے ۔

مزید :

کراچی -اہم خبریں -