جہازرانی کوحملوں کا نشانہ بنانے کے حوثی حربوں کی تصدیق

جہازرانی کوحملوں کا نشانہ بنانے کے حوثی حربوں کی تصدیق

ریاض(این این آئی)یمن میں آئینی حکومت کی بحالی میں معاونت کرنے والے سعودی عرب کی قیادت میں قائم عرب فوجی اتحاد کے ترجمان نے بتایا ہے کہ حوثی باغی بحر احمر میں عالمی جہاز رانی کو نشانہ بنانے کے لیے جنگجوؤں کو خصوصی تربیت دے رہے ہیں۔عرب ٹی وی کے مطابق عرب فوجی اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے الریاض میں ایک پریس کانفرنس کے دوران آواز اور تصاویر کے ثبوتوں پر مشتمل شواہد بھی صحافیوں کے سامنے پیش کیے۔ آوازوں اور تصاویر پر مشتمل شواہد یہ ثابت کرنے کے لیے کافی ہیں کہ حوثی باغی الحدیدہ بندرگاہ اور دیگر مقامات پر عالمی بحری جہازوں کو روکنے کے لیے خطرہ بن سکتے ہیں۔کرنل المالکی نے بتایا کہ حوثی شدت پسند عرب اتحاد کے بحری جہازوں کی مانیٹرنگ کے لیے راڈاراک استعمال کرتیہیں۔ بیرون ملک سے بھی حوثیوں کو اس سلسلے میں بھرپور معاونت مل رہی ہے۔ترکی المالکی نے کہا کہ حوثی باغی سمندر میں عالمی جہاز رانی کو خطرے میں ڈالنے کے ذمہ دار ہیں۔ حوثی باغی یمن میں اسلحہ کی اسمگلنگ جاری رکھنے کے لیے مختلف ملکوں کے جہازوں کو نشانہ بنانے کی دھکمیاں دے رہے ہیں۔خیال رہے کہ دو روز قبل حوثی باغیوں نے دھمکی دی تھی کہ وہ باب المندب اور دوسری بندرگاہوں سے عالمی جہازوں کو گذرنے سے روک دیں گے۔

مزید : عالمی منظر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...