سانحہ قصور: پنجاب بھر کے وکلاء کی ماتحت عدالتوں میں مکمل ہڑتال

سانحہ قصور: پنجاب بھر کے وکلاء کی ماتحت عدالتوں میں مکمل ہڑتال

لاہور(نامہ نگار خصوصی /نامہ نگار)قصور میں کمسن بچی زینب کے قتل کے خلاف پنجاب بھر کے وکلاء نے ماتحت عدالتوں میں مکمل ہڑتال کی ۔سپریم کورٹ بار نے کیس کے ملزم کی سمری ٹرائل کا مطالبہ کردیا ہے جبکہ لاہور ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن نے وزیراعلیٰ پنجاب اور وزیرقانون پنجاب کے استعفیٰ کا مطالبہ کیا ہے ۔لاہور بار ایسوسی ایشن نے بچی کے والدین کو مفت قانونی معاونت فراہم کرنے کااعلان کیاہے۔ہڑتال کی کال پنجاب بار کونسل نے دی تھی ۔دیگر شہروں کی طرح ماڈل ٹاؤن کچہری ، کینٹ کچہری اور ضلع کچہری سمیت لاہور بھر کی عدالتوں میں وکلاء پیش نہیں ہوئے ،وکلاء کی ہڑتال کے باعث لاکھوں مقدمات کی سماعت متاثر ہوئی ،صرف لاہور میں تقریباً40ہزار مقدمات کو بغیر کارروائی کے ملتوی کردیا گیا۔وکلاء نے حکومت پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ لرزہ خیر واقعے کی ایف آئی آر میں انسدادِ دہشت گردی کی دفعات درج کر کے ملزم کو جلداز جلد گرفتار کر کے عبرتناک سزا دی جائے۔لاہور بار کے نائب صدرماڈل ٹاؤن سیٹ حسام الدین بسریا نے کہا ہے کہ وکلاء بچی کے والدین کے غم میں برابر کے شریک ہیں اور حکومت سے ملزم کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کرتے ہیں۔

ہڑتال

مزید : علاقائی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...