یو این ٹیم کشمیر ، فلسطین کا دورہ کر کے بھارتی و اسرائیلی جارحیت بے نقاب کیوں نہیں کرتی

یو این ٹیم کشمیر ، فلسطین کا دورہ کر کے بھارتی و اسرائیلی جارحیت بے نقاب کیوں ...

لاہور( ایجوکیشن رپورٹر) جمعیت علماء پاکستان(نورانی) کے زیر اہتمام آل پارٹیز کانفرنس میں شریک مذہبی و سیاسی جماعتوں کے قائدین نے اقوام متحدہ کی 24جنوری کو پاکستان آنے والی ٹیم کی طرف سے مرکز طیبہ مریدکے کا دورہ کرنے کی خبروں پر شدید ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ اقوام متحدہ نے کشمیر اور فلسطین کے حوالہ سے بھی قراردادیں پاس کی ہیں‘یو این کی ٹیم کشمیر اور فلسطین کا دورہ کر کے وہاں مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے مظالم اور بھارتی و اسرائیلی جارحیت بے نقاب کیوں نہیں کرتی۔ھدیۃ الھادی پاکستان کے سربراہ پیر سید ہارون علی گیلانی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر کے حوالے سے جو قراردادیں پاس کی گئی ہیں اقوام متحدہ پہلے ان پر تو عمل درآمد کروائے پھر مرکز طیبہ کا دورہ کرے۔اقوام متحدہ کی ٹیم کو پہلے کشمیر جانا چاہئے۔ بھارت کی نریندر مودی حکومت تو اقوام متحدہ کے کسی رکن کو کشمیر جانے کی اجازت نہیں دیتی لیکن پاکستانی حکمران بیرونی دباؤ پر اپنی ہی محب وطن تنظیموں کیخلاف اقدامات اٹھانے میں مصروف ہیں اور عدالتی فیصلوں کی توہین کی جارہی ہے۔ جمعیت علماء پاکستان (نورانی) کے سربراہ،ملی یکجہتی کونسل کے صدر ڈاکٹر ابوالخیر محمد زبیر نے کہا کہ ختم نبوت پرحکمرانوں نے ڈاکہ ڈالا تو عوام میدان میں آ گئے،انتخابی اصلاحات کا نام لے کر خاموشی سے چوری کی تھی لیکن حکمرانوں کی سازش بے نقاب ہوگئی۔انہوں نے کہا 2018کا الیکشن مل کر لڑنا چاہئے۔اگر متحد نہ ہوئے تو الیکشن میں وہی نتائج آئیں گے جو ضمنی انتخابات میں آ رہے ہیں۔الیکشن میں ختم نبوت کے غداروں کا مقابلہ کریں گے۔امیر جماعۃالدعوۃ پاکستان پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہاکہ اس وقت پاکستان سب سے بڑا نشانہ ہے، پوری دنیا کے کافر اس کی ایٹمی صلاحیت کے خاتمہ اور عدم استحکام سے دوچار کرنے کی کوششیں کر رہے ہیں۔ دشمن قوتیں پاکستان کے آئین سے اسلامی دفعات ختم کرنا چاہتی ہیں۔آج اس بات کا عہد کریں کہ ہم متحد بھی ہوں گے اور یہ سازشیں کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ انہوں نے کہا افغانستان سے شکست کھا کر امریکہ نئی جنگ کی تیار ی کر رہا ہے۔ جمعیت علماء اسلام(س) کے سربراہ مولانا سمیع الحق نے کہا دشمن کی تفریق آج ختم کرنے کی ضرورت ہے۔علماء انبیاء کے وارث ہیں،وارث متحد ہوں گے تو گھر محفوظ رہے گا۔اگر ملک کا نظام عدل،نظام معیشت ٹھیک ہو تو سب ٹھیک ہو سکتا ہے ۔ہمارے درمیان جب تک اتحاد نہیں ہو گا ہم منزل تک نہیں پہنچ سکیں گے۔اب موقع ہے کہ ہم73کی طرح تحریک نظام مصطفیٰ منظم کریں،قادیانی آرام سے نہیں بیٹھنے دیں گے۔اوباما نے میرے پاس ایک مشن اکوڑہ ختک بھیجا تھا جس میں ترجمان قادیانی تھے، اس گفتگو میں دو چیزیں تھیں کہ ختم نبوت اور ناموس رسالت کا مسئلہ آئین سے نکل جائے ، اسے انسانی حقوق کے خلاف کہا گیا۔اقوام متحدہ کو مجبور کرنا چاہئے کہ اس مسئلہ کو ختم کرے۔انہوں نے کہا جب تک امریکہ کا تسلط رہے گا یہ باتیں چلتی رہیں گی۔ہم اعلان کریں کہ امریکی تسلط منظور نہیں۔جہاد دہشت گردی نہیں ،جہاد ہو گا تو بیت المقدس بھی آزاد ہو گا اور کشمیر بھی آزاد ہو گا۔عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے کہا کہ سب کو پتہ ہے کہ چور کون ہے،قانون میں تبدیلی کس نے کروائی،سب جانتے ہیں اس کے پیچھے نواز شریف ہے پھر بھی بہانے ڈھونڈ رہے ہیں۔نواز شریف مجرم ہے جس نے ملک کی معیشت کو تباہ کیا۔انہوں نے کہا کہ شہباز شریف نے نو بلین روپے بنائے اتفاق فاؤنڈری کو بیچ کر ،یہ سب چور ہیں۔عوام کو اپنے جان ،مال کے تحفظ کیلئے بولنا پڑے گا۔انہوں نے کہا آج مودی اور ٹرمپ ایک ہیں،جو مودی کا یار ہے وہی ٹرمپ کا یار ہے۔انہوں نے کہا جیلیں معمولی چوری کرنے والوں سے بھری ہوئی ہیں انہیں رہا کیا جائے اور ملکی معیشت پر ڈاکہ مارنے والوں کو جیل میں ڈالا جائے۔انہوں نے کہا کہ ہم سی پیک کے حامی ہیں لیکن ہماری آنکھیں بند نہیں ہیں،یہ حکمران بلین کے ڈکیت ہیں۔بچیاں ظلم کا نشانہ اس لئے بنیں گی کہ جوانوں کے پاس رشتے،نوکریاں نہیں،جس ملک میں مائیں بچوں کے ساتھ نہروں میں چھلانگیں لگا رہی ہوں،ایسی جمہوریت پر لعنت ہے۔جس ملک میں مائیں سڑکوں پر بچوں کو جنم دیں ایسی جمہوریت پر لعنت ہے۔انہوں نے کہا کہ لاہور جاگے تو پاکستان جاگے گا،اب اگر کوئی نہ نکلا تو میں اکیلا جاتی امرا کی طرف نکلوں گا۔

مذہبی و سیاسی رہنما

مزید : صفحہ آخر