متنازعہ تحقیقاتی کمیشن کو انتخابی دھاندلی کے کوئی ثبوت نہیں ملے : وائٹ ہاؤس


واشنگٹن(این این آئی)وائٹ ہاؤس نے کہاہے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طرف سے 2016ء کے صدارتی انتخاب میں دھاندلی کے الزام کی تحقیقات کرنیوالے متنازعہ کمیشن کو دھاندلی کے کوئی ثبوت نہیں ملے اوروہ اکٹھے کئے جانیوالے ڈیٹا کو محکمہ ہوم لینڈ سکیورٹی کو فراہم نہیں کرے گا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق یہ بات وائٹ ہاؤس کے اعلیٰ ٹیکنالوجی اہلکار نے بتائی ۔واشنگٹن ڈی سی میں امریکی کورٹ آف اپیل میں ایک دستاویز پیش کرتے ہوئے وائٹ ہاؤس کے آئی ٹی ڈائریکٹر چارلس ہرنڈن نے کہا پینل تمام ریاستوں کے وو ٹر ز سے متعلق وہ تفصیلات ضائع کر دے گا جو گزشتہ ہفتے صدر ٹرمپ کی طرف سے کمیشن کو ختم کرنے کے بعد موصول ہوئی ہیں۔ہرنڈن نے کہاریاستوں کے ووٹروں سے متعلق تفصیلات محکمہ ہوم لینڈ سکیورٹی یا کسی بھی دوسری ایجنسی کو منتقل نہیں کی جائیں گی۔ وائٹ ہاؤس نے گز شتہ ہفتے اعلان کیا تھا کہ صدارتی انتخاب میں مبینہ دھاندلی کی تحقیقات کرنیوالے کمیشن کو شہری حقوق کی تنظیموں کی طرف سے دائر کئے گئے مقدموں پر اْٹھنے والے بھاری اخراجات کی وجہ سے ختم کیا جا رہا ہے، اس کے علاوہ متعدد امریکی ریاستوں نے بھی ووٹرزسے متعلق تفصیلا ت کو استعمال کرنے کے انداز کو چیلنج کر رکھا تھا۔
وائٹ ہاؤس

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...