سی پیک منصوبہ سے صرف پنجاب نے استفادہ کیا : سرفراز بگٹی

سی پیک منصوبہ سے صرف پنجاب نے استفادہ کیا : سرفراز بگٹی

کوئٹہ(آن لائن)سابق صوبائی وزیر داخلہ میر سرفراز بگٹی نے کہاہے ملک میں دہشتگردی کیخلاف ہزارہ قوم نے بہت بڑی قربانیاں دی ہیں، دہشتگردوں نے ہمارے ہسپتالوں،سکولوں اور کھیل کے میدانوں کو ویران کرنے کی بہت کوشش کی مگر بحیثیت قوم دہشتگردی کا ڈٹ کر مقابلہ کیا، نواب ثناء اللہ زہری نے استعفیٰ دیدیا اب ان کیخلاف کوئی بات نہیں کرونگا جو جمہوریت کے چمپئن کے دعویدارہیں انہوں نے ا پنے ہی پارٹی کے انٹرا انتخابات نہیں کرائے ، دو ضمنی انتخابات میں اپنے امیدوار انتخابی نشان پر نہیں لائے، سابقہ وزیراعلیٰ کیخلاف تحریک عدم اعتماد ایک آئینی وجمہوری راستہ تھا کیونکہ بلوچستان میں بدامنی ، بیروزگاری اور پسماندگی انتہا کو پہنچی تھی،گزشتہ روز مری آباد ہاکی گراؤنڈ میں مجلس وحدت المسلمین کی جانب سے ظہرانہ تقریب سے خطاب میں انکا مزید کہنا تھا ہزارہ قوم اورسکیورٹی فورسز کی قربانیوں کی بدولت ہی آج ہم ایک جگہ اکٹھے ہیں اور پرامن طریقے سے رہ رہے ہیں ، ہم دہشت گردوں کے مزموم عزائم کو کسی بھی صورت کامیاب نہیں ہونے د ینگے ،بلوچستان میں30 ہزار آسامیاں خالی ہیں اگر30 ہزار نوجوان بھرتی ہو جاتے تو کافی حد تک بیروزگاری کا خاتمہ ہو جاتا، سی پیک منصو بے سے صرف پنجاب نے استعفادہ لیا اور ان کے نوجوان چین جا کر چینی زبان سیکھ رہے ہیں اور وہ یہاں آکر ان کی ترجمانی کرینگے، ہمار ے ہاں نہ تو ٹیکنیکل سکول ہے او ر نہ ہی ہم نے مستقبل میں کوئی منصوبہ بندی کی ہے، ہم میں سے جو بھی وزیراعلیٰ آئے گا وہ چار مہینے میں بلو چستان کے مسائل کو کافی حد تک ٹھیک کرئیگا ، ہمیں امید ہے ہر شعبے میں بہتری آئے گی، رکن صوبائی اسمبلی سیدآغا رضا کو20 کروڑ روپے آفر ہوئی مگر انہوں نے وہ آفر قبول نہیں کی ،جو جنگ ہم جمہوری انداز سے لڑ رہے تھے اس میں ہمیں جیت ہوئی یہ کوئی شخصی لڑائی نہیں تھی ہمیں آفرزدی گئیں مگر تمام آفرز کو ٹھکرا دیا، ایک زمانے سے جو ہوا چل رہی تھی کہ سیاستدان پیسے لیتے ہیں لیکن بلوچستا ن کے ان اراکین نے ثابت کر دیاہم اصولی سیاست پر یقین رکھتے ہیں اور یہاں کوئی بکاؤ مال نہیں ،جہاں نا انصافی ہو گی وہاں ہم لڑیں گے۔اس کے موقع پر سید آغا رضا نے بھی خطاب کیا جبکہ سابق سپیکر جان محمد جمالی ، عوامی نیشنل پارٹی کے پارلیمانی لیڈ رانجینئر زمرک خان اچکزئی، میر عبدالقدو س بزنجو، طاہر محمود، رقیہ ہا شمی، میر عاصم کر د گیلو، مفتی گلاب کاکڑ، ماجد ابڑو، میر سرفراز چاکر ڈومکی ، آغا نواب شاہ سمیت مجلس وحدت المسلمین کے رہنماء اور ہزارہ برادری سے تعلق رکھنے والے قبائلی عمائدین بھی موجود تھے۔

سرفراز بگٹی

مزید : صفحہ آخر