خطے میں امریکی اور مغربی پالیسیوں کا خمیازہ بھگت رہے ہیں : دفتر خارجہ

خطے میں امریکی اور مغربی پالیسیوں کا خمیازہ بھگت رہے ہیں : دفتر خارجہ

اسلام آ باد ( مانیٹرنگ ڈیسک،آ ئی این پی)پاکستانی دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا ہے کہ پاکستان خطے کے حوالے سے امریکی اور مغربی پالیسیوں کا خمیازہ بھگت رہا ہے تاہم پاکستان بات چیت سے تمام مسائل کے حل پر یقین رکھتا ہے،امریکہ اور پاکستان کے درمیان مختلف سطح پر اور معاملات پر بات چیت جاری ہے۔ ہفتہ وار میڈیا بریفنگ دیتے ہوئے ڈاکٹر فیصل نے کہا کہ پاکستان میں داعش کی موجودگی کی تردید کرتے ہیں جبکہ دہشتگردوں کے خلاف بلا امتیاز کاروائیاں کی ہیں لہٰذایکطرفہ کارروائی کے بیانات جھنجھلا ہٹ کا ثبوت ہیں،ترجمان نے کہا کہ بھارت کے ساتھ سیاچن اور سرکریک سمیت مسائل پر بات چیت کے لئے تیا ر ہیں مگر وہ تیار نہیں۔ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ کوئٹہ میں دہشت گردی کا حملے افغانستان سے ہو ااور افغان حکومت کو ایسے دھماکوں روکنا ہو گا اور اس سلسلے میں کوئٹہ دھماکوں میں افغان سرزمین کے استعمال کا معاملہ افغان حکومت کے ساتھ اٹھایا جائے گا۔ڈاکٹر فیصل نے کہا کہ پاکستان میں طالبان رہنماؤں کی موجودگی کے حوالے سے الزامات کو مسترد کرتے ہیں اوراگر ایسی کوئی معلومات ہیں تو فراہم کی جائیں پاکستان کارروائی کرے گا تاہم افغانستان میں موجود دہشتگردوں کے خلاف افغان فورسز کارروائی کریں۔انہوں نے بتایا کہ بھارت نے ابھی تک جنگ بندی معاہدے کی 1970 خلاف ورزیاں کی ہیں جبکہ غیر ملکی سفیروں کو انسداد دہشت گردی میں پاکستان کی کاوشوں پر تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ترجمان دفتر خارجہ نے بتایا کہ سعودی عرب میں تیل کی قیمتوں کے باعث معیشت پر اثرات پیدا ہوئے تاہم سعودی عرب سے لوٹنے والے پاکستانی محنت کشوں کے واجبات کے حوالے سے سعودی عرب سے معاملہ اٹھایا جاے گا۔شام میں پاکستانی محمد اکرم اپنے خاندان کے بغیر پاکستان آنے کو تیار نہیں۔معاملہ کو شام کی وزارت خارجہ سے اٹھایا ہے۔محمد اکرم کی ایک اہلیہ پاکستانی اور ایک شامی ہیں۔

دفتر خارجہ

مزید : صفحہ اول