سوائن فلو سے ہلاکتیں جاری ،ایک اور مریضہ موت کے منہ میں چلی گئی

سوائن فلو سے ہلاکتیں جاری ،ایک اور مریضہ موت کے منہ میں چلی گئی

ملتان، رحیم یار خان(وقائع نگار، نمائندہ پاکستان) نشتر ہسپتال میں سوائن فلو میں مبتلا ایک اور مریضہ فوت ہوگئی ہے۔ 45سالہ مریم کا تعلق بھی ملتان سے بتایا جارہا ہے۔ اس طرح نشتر ہسپتال میں سوائن فلو سے فوت ہونے والے مریضوں کی مجموعی تعداد 19ہوگئی ہے۔ نشتر ہسپتال میں اس وقت 32مریض زیر علاج ہیں۔ جس میں سے 30مریض آئسولیشن وارڈ اور دو مریض آئی سی یو وارڈ میں زیر علاج ہیں آئسولیشن وارڈ میں داخل مریض 14جبکہ آئی سی یو وارڈ میں داخل ایک مریض میں سوائن فلو کی تصدیق ہوئی ہے۔ نشتر ہسپتال میں سوائن فلو کے شبہ میں مزید 12مریض لائے گئے۔ واضح رہے اب تک مجموعی طور پر سوائن فلو کے شبہ میں 143مریض لائے جاچکے ہیں۔ جس میں سے 69میں سوائن فلو کی تصدیق ہوچکی ہے۔ گزشتہ روز جمعرات 3مریضوں میں سوائن فلو (سیزنل انفلونزا ایچ ون این ون ) کی تصدیق ہوئی ہے۔ جبکہ چک111-1Lتحصیل خانپور کارہائشی 45سالہ غلام رسول کو سوائن فلو میں مبتلا ہوجانے پر ورثاء نے حالت تشویشناک ہوجانے پر طبی امداد کے لئے شیخ زید ہسپتال رحیم یارخان منتقل کردیا جہاں لیبارٹری سے سوائن فلو کی تصدیق ہوجانے پر ہسپتال انتظامیہ نے وارڈ منتقل کردیا جہاں طبی امداد کے باوجود غلام رسول کی حالت انتہائی تشویشناک بیان کی جارہی ہے۔ واضح رہے کہ ضلع میں یہ سوائن فلو کادوسرا کیس سامنے آیا اس کے قبل38سالہ خاتون کی ہلاکت ہوچکی ہے۔ صوبائی محکمہ صحت حکام کی جانب سے جاری کردہ نوٹیفکیشن میں بتایا گیا ہے کہ پنجاب بھر میں موسمی انفلوائنزا کے باعث سرکاری ہسپتالوں میں ہنگامی صورتحال ہے جس کی وجہ سے تاحکم ثانی ڈاکٹروں کے مراکز صحت پر انٹرڈسٹرکٹ تبادلوں پر پابندی عائد کر دی گئی ہے ۔

مزید : کراچی صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...