جولائی تا دسمبر 2018 تجارتی خسارہ 17 ارب 96 کروڑ ڈالر کی بلند ترین سطح پر


ملتان( جنرل رپورٹر ) مالی سال2017-18 کی پہلی ششماہی میں ملک کا تجارتی خسارہ 17 ارب 96 کروڑ 30 لاکھ ڈالر کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا ہے ۔ مالی سال 2016-17 کی پہلی ششماہی(بقیہ نمبر16صفحہ12پر )

میں تجارتی خسارہ 14 ارب 42 کروڑ 80 لاکھ ڈالر رہا تھا ‘ تجارتی خسارہ میں اضافے کی شرح 24.50 فیصد رہا ‘ پاکستان بیورو آف سٹیٹکس کی رپورٹ کے مطابق جولائی ‘ دسمبر 2017 میں برآمدات ’ایکسپورٹ ‘ میں اضافہ 11.24 فیصد رہا جبکہ درآمدات ’امپورٹس ‘ میں اضافے کی شرح 19.11 فیصد رہی ‘ دسمبر 2017 میں دسمبر 2018 کے مقابلے میں ملک سے ایکسپورٹس میں اضافہ 14.81 فیصد رہا ۔ دسمبر 2017 میں دسمبر 2018 کے مقابلے میں ملک میں درآمدات میں اضافہ 10.91 فیصد رہا ‘ جولائی ‘ دسمبر 2017-18 میں ملک سے مجموعی ایکسپورٹس 11 ارب 7 لاکھ ڈاگر رہیں ‘ جولائی ‘ دسمبر2016-17 میں ایکسپورٹس کا حجم 9 ارب 98 کروڑ 50 لاکھ ڈاگر رہا تھا ‘ ایکسپورٹ ایک ارب 11 کروڑ 20 لاکھ ڈالر بڑھیں ‘ جولائی ‘ دسمبر 2017 میں امپورٹس کا حجم 28 ارب 97 کروڑ ڈالر رہا ۔ جولائی ‘ دسمبر 2016 میں امپورٹس 24 ارب 32 کروڑ 30 لاکھ ڈالر رہی تھیں ۔ امپورٹس میں بقایا جات اضافہ 4 ارب 89 کروڑ 70 لاکھ ڈالر رہا ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...