افریقہ، طالبات پر ماہواری کے دنوں میں دریا کو عبور کرنے پر پابندی

افریقہ، طالبات پر ماہواری کے دنوں میں دریا کو عبور کرنے پر پابندی
افریقہ، طالبات پر ماہواری کے دنوں میں دریا کو عبور کرنے پر پابندی

  

آکرہ(این این آئی)افریقہ کی ریاست گھانا کے ایک علاقے میں طالبات کے ماہواری کے دنوں میں اور منگل کے دن دریا کو عبور کر کے سکول جانے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق یہ پابندی بظاہر مقامی دریا کے ’دیوتا‘ کی جانب سے عائد کی گئی ہے اور اس پر بچوں کے حقوق کے لیے کام کرنے والی تنظیموں نے احتجاج کیا ہے کیونکہ طالبات کو سکول جانے کے لیے لازمی دریا کو عبور کرنا پڑتا ہے۔وسطی گھانا میں اس پابندی کے عائد ہونے کی صورت میں لڑکیاں پڑھائی سے محروم ہو سکتی ہیں۔گھانا میں پہلے ہی طالبات کی ماہواری کے دوران سکول جانے کی حوصلہ افزائی کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔اقوام متحدہ کے ادارے یونیسیکو کا کہنا ہے کہ گھانا میں 10 میں سے ایک لڑکی ماہواری کی وجہ سے سکول نہیں جا پاتی،ایک کروڑ 15 لاکھ خواتین کو ماہواری کے دوران مناسب سہولیات دستیاب نہیں ہوتی ہیں۔

یونیسیکو کی اہلکار شمیمہ مسلم الحسن نے بتایا کہ دریائے آفن پر لگائی جانے والی پابندی لڑکیوں کے تعلیم حاصل کرنے کے حق کے منافی ہے۔بعض اوقات میں سوچتی ہوں کہ ان دیوتاؤں کا کسی نہ کسی شکل میں احتساب ہونا چاہیے کہ وہ مسلسل کئی چیزوں کو ہونے سے روکے ہوئے ہیں اور حساب کرنا چاہیے کہ اس بے پناہ طاقت کا استعمال کس طرح سے کیا جو ہم نے انھیں دی ہے۔

لائیو ٹی وی دیکھنے کے لئے اس لنک پر کلک کریں

مزید : ڈیلی بائیٹس