انجلین ملک کی جانب سے بچوں کے استحصال کیخلاف مہم کا آغاز

انجلین ملک کی جانب سے بچوں کے استحصال کیخلاف مہم کا آغاز

  



لاہور(فلم رپورٹر)بچوں کے استحصال کے خلاف مہم کا آغاز کرنے کے لئے اداکارہ و پروڈیوسر انجلین ملک کی جانب سے ایک پرہجوم پریس کانفرنس منعقد ہوئی جس کا مقصد معاشرے میں بچوں کے ساتھ ہونے والی زیادتی کے خلاف بیداری مہم کا آغاز کرنا تھا۔اس موقع پر انجلین ملک کی زیر ہدایت اسی موضوع پر اردو اور انگریزی میں بنائی گئی ایک مختصر فلم بھی نشر کی گئی۔پریس کانفرنس میں میں بے شمار مشہور شخصیات کے ویڈیو شاٹ آؤٹس بھی نشر کئے گئے جنہوں نے اس مقصد کے خلاف بات کرتے ہوئے اس مسئلے سے نمٹنے کے لئے حل بھی تجویز کئے۔جن لوگوں نے اپنے پیغامات ریکارڈ کرائے ان میں اشناشاہ، حنا بیات،ثمن انصاری، ثمینہ احمد، بشری ٰانصاری، احمد علی بٹ،علی خان، ثروت گیلانی، سمعیہ ممتاز،راسق اسماعیل، سلمیٰ حسن،سوزین فاطمہ اور ندا یاسر شامل تھے۔پریس کانفرنس میں اس مسئلے کے خلاف آواز اٹھانے اور اس مقصد کے لئے اظہار یکجہتی کے لئے متعدد مشہور شخصیات موجود تھیں۔ ملک کے قابل ذکر شرکاء کے علاوہ اس موقع پر تقریر کرنے والوں میں ثمینہ احمد، بشری ٰانصاری، ضیبہ بختیار، علی خان، فراز خان(ایڈوائزر بورڈممبراف محافظ)اورمختار رحمان(عورت فاؤنڈیشن) شامل تھے۔

جنہوں نے اس بات کی بھرپور حمایت کی کہ بچوں کے ساتھ ہونے والی زیادتیوں کو روکنا سب کی ذمہ داری ہے۔بچوں کے ساتھ ہونے والی زیادتی کے بڑھتے ہوئے واقعات کے باوجود آج بھی پاکستان میں بچوں کے ساتھ بدسلوکی سب سے زیادہ نظرانداز کیا جانے والا مسئلہ ہے۔اس حوالے سے رپورٹ شدہ کیسوں کی شرح میں سالانہ تیزی سے اضافہ عمل میں آرہا ہے جو ایک تشویشناک امر ہے۔اب ضرورت اس امر کی ہے کہ اس حساس مسئلے کو نہ صرف قومی سطح پر اجاگر کیا جائے بلکہ اس کے قابل عمل حل بھی نکالے جائیں۔

مزید : کلچر