ججز قوانین کے مطابق ٹائم فریم میں میر ٹ اور قانون کے مطابق فیصلے کریں:چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ

ججز قوانین کے مطابق ٹائم فریم میں میر ٹ اور قانون کے مطابق فیصلے کریں:چیف ...

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ مسٹر جسٹس مامون رشید شیخ کاکہناہے کہ ججوں کو چاہئے کہ وہ قوانین کے مطابق مقرر کردہ ٹائم فریم میں میرٹ اور قانون کے مطابق فیصلے کریں اور سائلین کو جلد اور معیاری انصاف کی فراہمی یقینی بنائیں۔ ان خیالات کاا ظہار انہوں نے پنجاب جوڈیشل اکیڈمی میں جنرل ٹریننگ پروگرام کے تحت نویں تربیتی کورس کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا،چیف جسٹس نے مزید کہا کہ جج ریسرچ ورک کو اپنائیں اور میرٹ کے مطابق فیصلے کریں، یاد رکھیں ذاتی پسند نا پسند اور کوئی بھی دباؤ ہمارے فیصلوں پر اثر انداز نہیں ہونا چاہیے بلکہ تمام فیصلے قانون و آئین کے مطابق میرٹ پر ہونے چاہئیں۔ سیکھے ہوئے علم کی بناء پر بہترین فیصلوں کی بدولت عدلیہ اور ججوں کی عزت و وقار میں اضافہ ہوگا،ججوں کے لئے لازمی ہے کہ انہیں خود پر اعتماد ہو اور وہ پر اعتماد انداز میں عدالت چلائیں،چیف جسٹس نے مزید کہا کہ ہم آرٹی فیشل انٹیلی جنس کی جانب گامزن ہیں، دنیا جدید ٹیکنالوجی اور آئی ٹی سے استفادہ کررہی ہے، ججوں کے لئے ضروری ہے کہ وہ ہر لحاظ سے اپ ٹو ڈیٹ رہیں،چیف جسٹس نے کہا کہ رجسٹرار لاہور ہائیکورٹ عبدالستار اپنے عہدے سے ریٹائرڈ ہورہے ہیں،رجسٹرار عبدالستار ایک نفیس شخصیت ہیں، انہوں نے بطور رجسٹرار لاہور ہائی کورٹ بہترین خدمات سر انجام دیں، ہمیں امید ہے کہ نامزد رجسٹرار لاہور ہائیکورٹ اشترعباس بھی اپنی بھرپور صلاحیتوں کے ساتھ اس ادارے کی خدمت کریں گے،اختتامی تقریب میں رجسٹرار لاہور ہائیکورٹ عبدالستار، ڈی جی ڈسٹرکٹ جوڈیشری اشترعباس، ڈی جی پنجاب جوڈیشل اکیڈمی حبیب اللہ عامر اور سیشن جج ہیومن ریسورس ساجد علی اعوان سمیت اکیڈمی کے فیکلٹی ممبران، افسران اور تربیتی کورس مکمل کرنے والے ایڈیشنل سیشن جج اور سول جج بھی موجود تھے،قبل ازیں ڈی جی پنجاب جوڈیشل اکیڈمی حبیب اللہ عامر اور تربیتی کورس مکمل کرنے والے ایڈیشنل سیشن ججوں اور سول ججوں کے نمائندوں نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا، تقریب کے اختتام پر چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ مامون رشید شیخ نے تربیتی کورس مکمل کرنے والے جوڈیشل افسران میں اسناد بھی تقسیم کیں۔

چیف جسٹس ہائیکورٹ

مزید : صفحہ آخر


loading...