مقبوضہ کشمیر،کرفیو کو 5ماہ 10دن مکمل،گھر گھر تلاشی،درجنوں گرفتار،پابندیاں مزید سخت

مقبوضہ کشمیر،کرفیو کو 5ماہ 10دن مکمل،گھر گھر تلاشی،درجنوں گرفتار،پابندیاں ...

  



سرینگر (مانیٹرنگ ڈیسک،این این آئی)مقبوضہ کشمیر میں بھارتی بربریت اور کرفیو کو 160 روز مکمل ہو گئے،بھارتی سپریم کورٹ کے حکم کے باوجود تاحال وادی میں انٹرنیٹ پر عائد پابندی کو نہیں اٹھایا گیاجبکہ بھارتی فوج نے ظالمانہ کارروائیوں کا سلسلہ مزید تیز کرتے ہوئے سرینگر سمیت دیگر اضلاع سے3 درجن سے زائد نوجوانوں کو گرفتار کرلیا ہے۔ کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق بھارتی پولیس اور فوجیوں نے گزشتہ ایک ہفتے کے دوران سرینگر، بڈگا م، بانڈی پورہ، کولگام، پلوامہ، شوپیاں اور کشتواڑ کے اضلاع میں محاصرے اور تلاشی کی کارروائیوں اور گھروں پر چھاپوں کے دوران نثار احمد ڈار، سجاد احمد ڈار، عامر احمد بٹ، سمیر احمد نجار، مدثر احمد خان، عبدالعزیز خان، محمد عارف میر، مبارک احمد گنائی، جماعت اسلامی کے کارکن مفتی عمران وانی، ایک مسجد کے امام شبیر احمد، شوکت احمد میر، شبیر احمد میر اور جاوید احمد صوفی سمیت درجنوں نوجون گرفتار کر لیے۔ بانڈی پورہ، پلوامہ، شوپیاں اور کشتواڑ کے رہائشیوں نے کہا ہے کہ تلاشیوں زندگی عذاب بنادی، انہوں نے کہا کہ بھارتی فورسز اہلکار بلاوجہ گھروں میں گھس کر مکینوں کو ہراساں اور نوجوانوں کو گر فتار کر لیتے ہیں۔ دریں اثنا قابض انتظامیہ نے آٹھ افراد پر کالا قانون ”پبلک سیفٹی ایکٹ“ لاگو کر کے انہیں سینٹرل جیل سرینگر منتقل کر دیا ہے۔ 

کشمیر،کرفیو

مزید : صفحہ اول