حکومت فوری طور پر این ایف سی ایوارڈ کا اجراء کرے، سردار حسین بابک

حکومت فوری طور پر این ایف سی ایوارڈ کا اجراء کرے، سردار حسین بابک

  



پشاور(سٹی رپورٹر) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری اور خیبرپختونخوا اسمبلی میں ڈپٹی اپوزیشن لیڈر سردارحسین بابک نے کہا ہے کہ حکومت فوری طور پر این ایف سی ایوارڈ کا اجراء کرے، مزید تاخیر سے خیبرپختونخوا بالعموم اور نئے اضلاع بالخصوص متاثر ہوں گے جو یہاں کے عوام کے ساتھ زیادتی ہوگی۔ نشترہال پشاور میں ”قبائلی جرگہ برائے حصول حقوق قبائل“ کے موضوع پر کثیرالجماعتی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سردارحسین بابک نے کہا کہ حکومت دہشتگردی اور آپریشنز سے تباہ حال انفراسٹرکچر کی بحالی کیلئے جنگی بنیادوں پر عملی اقدامات اٹھائے، انضمام کے بعد انتظامی اختیارات کے اثرات نئے اضلاع کے عوام تک پہنچنے چاہیے۔ عوام کو ضروریات زندگی بہم پہنچانے کیلئے سنجیدہ اقدامات اٹھانے ہوں گے۔ سردارحسین بابک نے مطالبہ کیا کہ حکومت افغانستان کے ساتھ آمدورفت اور تجارتی راستے کھولنے کی کوششوں کو عملی جامہ پہنائے۔ طورخم بارڈر پر راستوں کی مشکلات کا ازالہ کیا جائے اور درآمدات و برآمدات کی پیچیدگیوں کو آسان بنایا جائے کیونکہ یہی ایک راستہ ہے جس کے ذریعے تجارتی حجم اور برآمدات میں اضافہ ممکن ہے۔ سردارحسین بابک کا کہنا تھا کہ حکومت اعلان کردہ دس سالہ عبوری و خصوصی مراعات پیکج پر عملدرآمد یقینی بنائے اور نئے اضلاع میں مختلف پراجیکٹس میں باہر کی بجائے مقامی لوگوں کو ترجیح دی جائے، غیرمقامی افراد کی بھرتی کا سلسلہ بند کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ سی پیک میں نئے اضلاع کیلئے میگاپراجیکٹس شامل کئے جائیں، تمام نئے اضلاع میں ٹیلیفون اور انٹرنیٹ کی سہولت وزیراعظم کے اعلان کے باوجود بحال نہ ہونا مجرمانہ غفلت ہے۔ حکومت کی جانب سے نئے اضلاع کے ترقیاتی عمل میں منتخب نمائندوں کی مشاورت نہ کرنا اور انکی رہنمائی کے بغیر ترقیاتی عمل منتخب نمائندوں پر عدم اعتماد ہے جو کسی بھی صورت ناقابل قبول ہے۔ سردارحسین بابک نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نئے اضلاع میں تمام شعبوں بالخصوص تعلیم اور صحت کے مد میں جنگی بنیادوں پر سہولیا اور ضروریات بہم پہنچائیں۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ نئے اضلاع میں مائنز کی صفائی کے کام کو مزید تیز کرتے ہوئے جلد سے جلد مکمل کیا جائے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...