نارتھ کراچی ٹریفک حادثہ حکومت سندھ کی نااہلی کانتیجہ ہے،ثروت فاطمہ

  نارتھ کراچی ٹریفک حادثہ حکومت سندھ کی نااہلی کانتیجہ ہے،ثروت فاطمہ

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر)تحریک لبیک پاکستان(ٹی ایل پی) کی خاتون رکن سندھ اسمبلی ثروت فاطمہ نے کراچی میں ہائی روف اور رکشے میں تصادم کے نتیجے میں آگ لگنے سے معصوم جانوں کے ضیاع پر اظہار افسوس کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت سندھ اور محکمہ ٹرانسپورٹ کی نااہلی نے کراچی کے شہریوں کی زندگی کو خطرات سے دوچار کردیا ہے۔غیر معیاری سی این جی اور ایل پی جی سلینڈرز اور گاڑیوں میں دوران سفر پٹرول رکھنے کی اجازت دینے سے شہر میں اس طرح کے مزید واقعات رونما ہوسکتے ہیں۔مراد علی شاہ حکومت فوری طور پر اس مسئلے پر توجہ دیتے ہوئے قوانین کی پابندی پر سختی سے عملدرآمد کرائے۔ ہفتہ کو جاری بیان میں ثروت فاطمہ نے کہا کہ نارتھ کراچی کے علاقے میں ہائی روف وین اور رکشے میں تصادم کے نتیجے میں ایک ہی خاندان کے 9افراد کا جاں بحق ہونا انتہائی افسوسناک واقعہ ہے۔تحریک لبیک پاکستان لواحقین کے غم میں برابر کی شریک ہے اور اللہ تعالیٰ سے دعا گو ہیں کہ وہ جاں بحق افراد کے درجات بلند کرے۔انہوں نے کہاکہ کراچی میں اس طرح کا واقعہ کوئی پہلی مرتبہ رونما نہیں ہوا ہے۔ماضی میں بھی اس طرح کی غفلت کی انسانی جانوں کا ضیاع ہوتا رہا ہے لیکن دس سال سے صوبے میں برسراقتدار پیپلزپارٹی کی حکومت نے اس مسئلے کے تدارک کے لیے آج تک کوئی سنجیدہ اقدام نہیں کیا ہے۔سی این جی اور ایل پی جی سلینڈرز کے حوالے سے قوانین کی دھجیاں اڑائی جارہی ہیں۔پبلک ٹرانسپورٹ میں ٹرانسپورٹرز نے اپنی گاڑیوں میں 6,6سلینڈرز لگارکھے ہیں جبکہ رکشہ ڈرائیورز بوتل میں پٹرول رکھ کر گاڑیاں چلارہے ہیں جن سے حادثات کے خطرات مزید بڑھ گئے ہیں۔محکمہ ٹرانسپورٹ سندھ اور ٹریفک پولیس نے ان ڈرائیورز کو عوام کی جانوں سے کھیلنے کی کھلی چھٹی دے رکھی ہے۔ثروت فاطمہ نے کہاکہ حکومت سندھ فوری طور پر عوام کے جانوں کے تحفظ کے لیے قوانین پر عملدرآمدکرائے۔تحریک لبیک پاکستان کی پہلی ترجیح عوام کی زندگی کا تحفظ ہے۔اس سلسلے میں ٹی ایل پی کی جانب سے جلدسندھ اسمبلی میں ایک قرارداد بھی پیش کی جائے گی۔علاوہ ازیں ثرت فاطمہ نے کوئٹہ کی مسجد میں بم دھماکے کے نتیجے میں امام مسجد اور ڈی ایس پی سمیت 15افراد کی شہادت پر اظہار افسوس کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں دہشت گرد ایک مرتبہ پھر سراٹھارہے ہیں۔مسجد میں بم دھماکے کرنے والے مسلمان تو کجا انسان کہلانے کے بھی مستحق نہیں ہیں۔سکیورٹی اداروں نے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرکے ملک میں امن کا قیام یقینی بنایا ہے۔عوام اور سکیورٹی ادارے امن دشمنوں کی سازشوں کو اپنے اتحاد سے ناکام بنادیں گے۔

مزید : صفحہ آخر