شہزادہ ہیری اورمیگھن مارکل کے عہدہ چھوڑنے سے پہلے کس کو بتا دیا تھا،برطانوی میڈیانام سامنے لے آیا،جان کر آپ بھی حیران رہ جائیں گے

شہزادہ ہیری اورمیگھن مارکل کے عہدہ چھوڑنے سے پہلے کس کو بتا دیا تھا،برطانوی ...
شہزادہ ہیری اورمیگھن مارکل کے عہدہ چھوڑنے سے پہلے کس کو بتا دیا تھا،برطانوی میڈیانام سامنے لے آیا،جان کر آپ بھی حیران رہ جائیں گے

  



لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن)برطانوی میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ شہزادہ ہیری اورمیگھن مارکل نے عہدہ چھوڑنے کاایلٹن جان کوپہلے بتادیاتھا،لیڈی ڈیاناکے دوست سرایلٹن جان،شہزادہ ہیری اورمیگھن کے رازدارہیں،ملکہ برطانیہ کوعلم ہونے سے پہلے ایلٹن جان کوشہزادہ ہیری کے ارادوں کاعلم تھا۔

برطانوی میڈیا کے مطابق شہزادہ ہیری اورمیگھن مارکل نے عہدہ چھوڑنے کاایلٹن جان کوپہلے بتادیاتھا،لیڈی ڈیاناکے دوست سرایلٹن جان،شہزادہ ہیری اورمیگھن کے رازدارہیں،ملکہ برطانیہ کوعلم ہونے سے پہلے ایلٹن جان کوشہزادہ ہیری کے ارادوں کاعلم تھا۔

برطانوی میڈیا کاکہنا ہے کہ میگھن مارکل نے ہلیری کلنٹن سے فاو¿نڈیشن کے قیام سے متعلق بھی مشورہ لیاتھا،میگھن مارکل نے سابق امریکی وزیرخارجہ ہلیری کلنٹن سے بھی مشورہ کیا،برطانوی میڈیاکامزید کہنا ہے کہ میگھن مارکل شوبزکی دنیامیں واپس آنےکابھی ارادہ رکھتی ہیں۔

یادر ہے کہ کچھ روز قبل برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق شہزادہ ہیری اور میگھن نے اعلان کیا ہے تھاکہ وہ’سینئر‘ شاہی حیثیت سے دستبردار ہو رہے ہیں اور مالی طور پر خودمختار ہونے کیلئے اقدامات کریں گے۔شاہی جوڑے کے مطابق اب وہ اپنا وقت برطانیہ اور شمالی امریکہ کے درمیان گزارنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ انسٹا گرام پر کی گئی اپنی پوسٹ میں شاہی جوڑے کاکہنا تھاکہ وہ اس معاملے پر باہم سوچ بچار کر چکے ہیں اور کئی ماہ سے جاری غوروفکر کے بعد اب انہیں نے اپنی شاہی حیثیت چھوڑنے کا فیصلہ کیاہے۔ہیری اور میگھن کے مطابق وہ ملکہ برطانیہ کی مکمل معاونت اور حمایت کاسلسلہ جاری رکھیں گے۔

شاہی جوڑے نے کہناتھا کہ انھوں نے 'کئی ماہ تک غورو فکر اور باہمی تبادلہ خیال کے بعد' یہ فیصلہ کیا ہے۔بیان میں شاہی جوڑے کا کہنا تھا کہ ’ہم شاہی خاندان کے 'سینئر' ارکان کی حیثیت سے دستبردار ہونے اور مالی طور پر خود مختار ہونے کا ارادہ رکھتے ہیں، جبکہ ہم ملکہ برطانیہ کی مکمل معاونت اور حمایت جاری رکھیں گے۔‘انھوں نے کہا کہ وہ برطانیہ اور شمالی امریکہ میں اپنا وقت گزارنے کا ارادہ رکھتے ہیں تاہم وہ 'ملکہ برطانیہ، دولت مشترکہ، اور شاہی خاندان کی سرپرستی میں اپنے فرائض کی انجام دہی اور ان کا احترام کرتے رہیں گے۔

بی بی سی کے مطابق ہیری اور میگھن نے یہ بیان دینے سے پہلے پورے خاندان میں کسی سے بھی مشاورت نہیں اور اس بات پرشاہی خاندان کی جانب سے دکھ اور مایوسی کااظہارکیاگیاہے جو کہ بہت سخت بات ہے۔

دوسری جانب بکنگھم پیلس کی خاتون ترجمان نے کہا کہ ڈیوک اور ڈچز کے ساتھ ان کے شاہی حیثیت سے دستبرداری کے فیصلے پر بات چیت ’ابتدائی مرحلے میں‘ تھی۔ انھوں نے مزید کہا ’ہم ان کے مختلف انداز اختیار کرنے کی خواہش کو سمجھتے ہیں، لیکن یہ پیچیدہ معاملات ہیں جن پر کام کرنے میں وقت لگے گا۔‘

برطانوی شاہی خاندان میں اختلافات پر ڈچز آف سسیکس میگھن مارکل اپنے بیٹے آرچی کے ساتھ واپس کینیڈا چلی گئیں۔ برطانوی ٹی وی سکائی نیوز نے اپنے ٹویٹر اکاونٹ پر ڈچز کے ترجمان کے حوالے سے بتایا ہے کہ میگھن مارکل اپنے بیٹے آرچی کے ساتھ کینیڈا چلی گئی ہیں۔ میگھن ایک ایسے وقت میں واپس گئی ہیں جب شاہی خاندان ہیری کو ان کا شاہی حیثیت سے دستبرداری کا فیصلہ واپس لینے کا کہہ رہا ہے۔

مزید : اہم خبریں /بین الاقوامی


loading...