سانحہ پی آئی سی پر حملہ اور مریضوں کی ہلاکت لیکن وکیلوں اور ڈاکٹروں کے معاملات کہاں جا پہنچے؟ تہلکہ خیز خبرآگئی

سانحہ پی آئی سی پر حملہ اور مریضوں کی ہلاکت لیکن وکیلوں اور ڈاکٹروں کے ...
سانحہ پی آئی سی پر حملہ اور مریضوں کی ہلاکت لیکن وکیلوں اور ڈاکٹروں کے معاملات کہاں جا پہنچے؟ تہلکہ خیز خبرآگئی

  



لاہور(جاوید اقبال)پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں وکلاءکے حملے کے بعد اہم حلقوں نے دونوں جانب زبان بندی کروادی ہے جس کے باعث دونوں اطراف نے چپ سادھ لی ہے،تاہم اہم حلقے دونوں گروپوں میں صلح کروانے کیلئے متحرک ہیں جس میں انہیں بڑی حد تک کامیابی حاصل ہو چکی ہے۔بتایا گیا ہے کہ وکیلوں کیخلاف درج کروائے گئے مقدمات کو دیکھنے کی ذمہ داری پنجاب حکومت نے اٹھا لی ہے اور ڈاکٹروں کو خاموش کروا دیا گیا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت جو خود بھی قانون دان ہیں کو وکلاءکے اعلیٰ حلقوں نے اس بات پر راضی کر لیا ہے کے حکومت وکلاء سے نرم رویہ اپنائے گی جس پر وزیر قانون نے انہیں مشورہ دیا ہے کہ وہ اپنے وکلاءکی زبان بندی کروائیں اور معاملے کو فی الحال ٹھنڈا ہونے دیا جائے۔

معاملہ ٹھنڈا ہونے پر صلح کروا دی جائے گی، جب وکلاءٹھنڈے ہو جائیں گے تو ڈاکٹر بھی ٹھنڈے ہو جائیں گے،دوسری طرف سینئر ڈاکٹرز نے اپنے جونیئر ڈاکٹرز کی بھی زبان بندی کروادی ہے۔ذرائع کا کہنا ہے آئندہ چند روز میں دونوں فریقین صلح پر آمادہ ہو جائیں گے جس سے یہ قصہ ختم ہو جائے گا۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور