مقبوضہ کشمیر کے عوام بڑی بہادری سے بھارتی بربریت اور ظلم و جبر کے سامنے ڈٹے ہوئے ہیں, دو مہینے کے کرفیو کے باوجود بھی ان کے حوصلے بلند ہیں: سردار عتیق خان

مقبوضہ کشمیر کے عوام بڑی بہادری سے بھارتی بربریت اور ظلم و جبر کے سامنے ڈٹے ...
مقبوضہ کشمیر کے عوام بڑی بہادری سے بھارتی بربریت اور ظلم و جبر کے سامنے ڈٹے ہوئے ہیں, دو مہینے کے کرفیو کے باوجود بھی ان کے حوصلے بلند ہیں: سردار عتیق خان

  



جدہ (محمد اکرم اسد) آزاد جموں و کشمیر کے سابق وزیر اعظم اور سربراہ مسلم کانفرنس سردار عتیق خان نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر کے عوام بڑی بہادری سے بھارتی بربریت اور ظلم و جبر کے سامنے ڈٹے ہوئے ہیں دو مہینے کے کرفیو کے باوجود بھی ان کے حوصلے بلند ہیں جبکہ بھارت خود کشمیر کے حالات خراب کرتے کرتے اس مقام پر پہنچ گیا ہے کہ اس وقت اپنے حالات انکے قابو سے باہر ہو گئے ہیں اور بھارت کے اپنےاندر آزادی کی تحریکیں چل پڑی ہیں ان خیالات کا اظہار یہاں انہوں نے اورسیز کشمیر کمیونٹی کی جانب سے اپنے اعزاز میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا، تقریب میں او آئی سی کے مسقل نمائندے رضوان شیخ، قونصل جنرل پاکستان خالد مجید اور دیگر قونصلران  و جدہ کشمیر کمیٹی کے چئیرمین مسعود پوری نے بھی شرکت کی۔

 سردار عتیق نے کہا کہ بھارتی آرمی چیف خواب نہ دیکھے اسے یاد ہونا چاہئیے کہ انہوں نے ہمارے دو کوے مارے تھے جبکہ جواب میں ہم نے لائن آف کنٹرول کے اندر جا کر درجنوں چوکیاں تباہ کیں ، انہوں نے کہا کہ بارڈر پر ہماری آرمی بعد میں پہلے کشمیری عوام ہی بھارتی فوج کے مقابلے کے لیے کافی ہیں، انہوں نے کہا کہ جس طرح ہماری سیاسی جماعتوں نے پارلیمنٹ میں ملکر آرمی ایکٹ کو قومی یکجہتی سے پاس کیا اس سے واضع پیغام گیا ہے کہ جہاں بھی قومی مفاد ہو گا ہم سب اس کے لیے ایک ہیں اور کسی بھی طاقت کو دانتوں چنے چبوا سکتے ہیں.

سردار عتیق نے کہا کہ بھارت کو جلد یا بدیر کشمیریوں کو حق خود ارادیت دینا ہی ہو گا اور اب مسلہ کشمیر کے حل کا وقت قریب آ گیا ہے اب یہ اقوام عالم کی ذمہ داری ہے کہ کشمیر میں جاری بھارتی مظالم و بربریت کا نوٹس لے اور اقوام متحدہ کی قردادوں کے مطابق فوری طور پر کشمیر کا مسلہ حل کیا جائے، تقریب سے خطاب کرتے ہوئے او آئی سی میں پاکستان کے مستقل نمائندے رضوان شیخ نے اپنی تقریر میں کہا کہ بھارت کے غاصبانہ اقدام کی وجہ سے اس وقت جموں کشمیر میں انسانی بحران ہے جبکہ بھارت اسکو حل کرنے جی بجائے انکی حق خود ارادیت کی جدوجہد کو دبانے کی کوشش کر رہا ہے، انہوں نی کہا کہ او آئی سی جب سے بنی ہےتب سے لیکر اب تک کشمیری عوام کے حقوق کے لیے جدوجہد کر رہی ہ، انہوں نے مطالبہ کیا کہ بھارتی حکومت انسانی حقوق کی تنظمیوں کو کشمیر میں جانے کی اجازت دے ، بھارت جتنا مسئلہ کشمیر کو دبانے کی کوشش کر ے گا یہ اتنا ہی بڑھے گا اور بھات اسکو دبا نہیں سکے گا کیونکہ یہ مسلۂ اب صرف کشمیر کا نہیں بلکہ انسانی حقوق کا مسلۂ ہے۔ او آئی سی میں پاکستان کے مستقل نمائندے ایمبسیڈر رضوان شیخ نے اپنے خطاب میں

کہا کہ بھارت کے غاصبانہ اقدام کی وجہ سےاس وقت جموں کشمیر میں انسانی بحران ہے ،او آئی سی جب سے بنی ہےتب سے لیکر آج تک کشمیری عوام کے حقوق کے لیے جدوجہد کر رہی ہےبھارتی حکومت انسانی حقوق کی تنظمیوں کو کشمیر میں جانے کی اجازت دے بھارت جتنا مرضی کشمیر ایشو کو دبانے کی کوشش کرے لیکن دبا نہیں سکتا یہ مسلۂ اب صرف کشمیر کا نہیں بلکہ انسانی حقوق کا مسلۂ ہے ۔تقریب کی صدرات اورسیز کشمیر کیمونٹی کے چئیرمین سردار اشفاق نے کی جبکہ تقریب سے سردار اشفاق، وقاص عنایت اور خورشید احمد متیال نے اپنے خطابات میں سردار عتیق خان کو عمرہ کی مبارکباد دی اور کیمونٹی کی جانب سے کشمیر کی آزادی کے لیےکارکردگی سے آگاہی دلائی۔ آخر میں کشمیر کی آزادی کے لئیے خصوصی دعا کرائی گئی۔  

مزید : عرب دنیا


loading...