جنسی عمل کے شوقین کچھوے کے اس شوق نے پوری نسل بچا لی

جنسی عمل کے شوقین کچھوے کے اس شوق نے پوری نسل بچا لی
جنسی عمل کے شوقین کچھوے کے اس شوق نے پوری نسل بچا لی

  



نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) جنسی عمل کے شوقین کچھوے نے اپنی نسل کو معدومی سے بچا لیا۔ ڈیلی سٹار کے مطابق اس کچھوے کا نام رینڈی ریپٹائل ڈیگو رکھا گیا ہے جس کی عمر 100سال ہے۔ یہ کچھوا گیلاپیگوس (Galapagos)نامی نسل کا ہے جو کہ معدومی کے خطرے سے دوچار ہو چکی تھی اور اس نسل کے صرف چند کچھوے ہی رہ گئے تھے۔ تاہم ڈیگو جنسی عمل کا شوقین واقع ہوا جس نے مادہ کچھوﺅں کو حاملہ کرکرکے 800بچے پیدا کر ڈالے اور اب یہ نسل معدومی کے خطرے سے باہر نکل آئی ہے۔

رپورٹ کے مطابق یہ کچھوے امریکی ریاست کیلیفورنیا کے قریب واقع سانتا کروز نامی جزیرے کے ساحل پر پالے جا رہے تھے۔ انہیں ماہرین نے اپنی نگرانی میں رکھا ہوا تھا اور ان کی نسل بڑھانے کی کوشش کی جا رہی تھی۔ ماہرین کے مطابق اس جزیرے کے ساحلوں پر 16ویں صدی میں اس نسل کے اڑھائی لاکھ سے زائد کچھوے تھے۔ پھر ان کی نسل ختم ہونے لگی اور 50سال قبل اس نسل کے صرف 2نر اور 12مادہ کچھوے باقی رہ گئے۔

یہ سب ایک دوسرے سے اتنی دوری پر تھے کہ ان کا ملنا اور بچے پیدا کرنا ناممکن تھا۔ جس پر ماہرین نے انہیں پکڑ کر ایک جگہ اکٹھا کیا۔ ماہرین کی ان کوششوں میں ڈیگو نے بھی اپنا حصہ ڈالا اور ان کے پروگرام کو کامیاب بنا دیا۔ اب ان کچھوﺅں کی مجموعی تعداد 4ہزار سے تجاوز کر چکی ہے جو زیادہ تر ڈیگو کی اولاد اور آگے اس کی اولاد کی اولاد ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس