اے این ایف کو قلمبند بیانات کی کاپیاں رانا ثناء اللہ کو فراہم کرنے کا حکم 

اے این ایف کو قلمبند بیانات کی کاپیاں رانا ثناء اللہ کو فراہم کرنے کا حکم 

  

لاہور(نامہ نگار)انسداد منشیات کی عدالت کے جج شاکر حسن نے اے این ایف کو پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنمارانا ثناء اللہ کے خلاف دوران تفتیش قلمبند کئے گئے بیانات کی کاپیاں فراہم کرنے کا حکم دیتے ہوئے آئندہ سماعت پر رانا ثناء اللہ کو فرد جرم کی کارروائی کے لئے طلب کر لیا گزشتہ روزعدالت نے محفوظ کیا گیافیصلہ سناتے ہوئے اے این ایف کو حکم دیا ہے کہ جتنے بھی بیانات قلمبند کئے گئے ان کی واضح کاپیاں رانا ثناء اللہ کو فراہم کی جائیں  رانا ثناء اللہ نے گواہوں کے بیانات کی کاپیاں لینے کے لیے عدالت میں متفرق درخواست دائر کررکھی تھی جس میں استدعا کی گئی تھی کہ 150سے زائد افرادکو گواہی کے بلایا گیاہے،ان کاریکارڈ مہیا کیا جائے، رانا ثناء اللہ عدالت میں پیش نہیں ہوئے جبکہ ان کے وکیل نے حاضری معافی کی درخواست دائر کرتے ہوئے موقف اختیارکیا کہ دھند کے باعث رانا ثناء اللہ موٹروے بند ہونے کی وجہ سے عدالت میں پیش نہیں ہوسکے عدالت رانا ثناء اللہ، عمر فاروق، عثمان احمد کی ایک روز کی حاضری معافی کی درخواست بھی منظور کر تے ہوئے سماعت 23جنوری تک ملتوی کردی۔

 واضح رہے کہ رانا ثناء اللہ کو یکم جولائی 2019 ء کو اے این ایف حکام نے گرفتار کیا تھاجس کے عدالت عالیہ نے ان کی ضمانت منظور کررکھی ہے۔

مزید :

علاقائی -