پروگرام ریڈیو کلینک میں ڈاکٹر مرتضی و ڈاکٹر طارق محمود شریک

 پروگرام ریڈیو کلینک میں ڈاکٹر مرتضی و ڈاکٹر طارق محمود شریک

  

لاہور(فلم رپورٹر)ریڈیو کلینک میں ڈائریکٹر جنرل ہیومن آرگن ٹرانسپلانٹ اتھارٹی پنجاب ڈاکٹر مرتضی حیدر اور صدر فیملی فزیشن ڈاکٹر طارق محمود میاں کی شرکت،میزبان اور پروڈیوسر مدثر قدیر تھے۔پروگرام کے آغاز میں بات کرتے ہوئے ڈاکٹر مرتضی حیدر کا کہنا تھا کہ انسانی اعضا ء  کی غیر قانونی پیوند کاری کو روکنے کے لیے اس اتھارٹی کو قائم کیا گیا اور 18ویں ترمیم کے بعد اس کا فنکشن صوبوں کو منتقل کردیا گیا اب تک اتھارٹی کے تحت راولپنڈی اور ملتان میں سب آفسز کام کررہے ہیں جبکہ آنے والے دنوں میں فیصل آباد میں اتھارٹی کا آفس قائم کردیا جائے گا تاکہ رجسٹر ہونے والے مریضوں کو دوسرے شہر نہ جانا پڑے ان کا کہنا تھا اب تک صوبے کے 59 سرکاری اور نجی ہسپتالوں کو اعضاء  کی پیوند کاری کے لئے رجسٹر کیا گیا اور ابھی بھی مزید 27ہسپتالوں کو رجسٹر کرنے پر کام جاری ہے۔ ان ہسپتالوں میں جگر،ْپھپھڑوں،کارنیا،بون میرو،کارڈ ک اور انترڑیوں کی پیوند کاری کی اجازت دی جاتی ہے اور ہماری ذمہ داری ہے کہ ہم غیر قانونی پیوند کاری کو روکیں اور اس حوالے سے ہم آئی واچر کا کردار ادا کررہے ہیں،اتھارٹی کی ویب سائٹ پر 90سے زائد لوگ ہیں جو اپنے اعضاء بعد از مرگ عطیہ کرنے کی خواہش رکھتے ہیں ابھی تک ہم نے کرونا سے متاثر مریض کو اس حوالے سے نہ تو رجسٹر کیا اور نہ ہی ایسے مریض کی پیوند کاری کی گئی ہے۔پروگرام کے اختتامی مراحل میں شمولیت کرتے ہوئے ڈاکٹر طارق محمود میاں کا کہنا تھا کہ وٹامن ڈی کو تمام وٹامن کا بادشاہ کہا جائے تو یہ غلط نہ ہوگا۔

گورنر پنجاب نے یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے اشتراک سے اس حوالے سے جو مہم شروع کی ہے وہ خصوصی اہمیت کی حامل ہے اس مہم کے دوران حکومت وٹامن ڈی کے 2لاکھ یونٹس پر مشتمل انجکشنز،کیپسول اور گولیاں ایک بار عوام کو فری مہیا

مزید :

کلچر -