محسود قبائل کا سمیڈا آرگنائزیشن کے خلاف سینکڑوں گاڑیوں پر مشتمل احتجاجی ریلی 

 محسود قبائل کا سمیڈا آرگنائزیشن کے خلاف سینکڑوں گاڑیوں پر مشتمل احتجاجی ...

  

 ٹانک(نمائندہ خصوصی)جنوبی وزیرستان محسود قبائل کا سمیڈا آرگنائزیشن کے خلاف سینکڑوں گاڑیوں پر مشتمل آحتجاجی ریلی ڈپٹی کمشنر کمپاونڈ پہنچ گئی، سمیڈا حکام نے حق داروں کی حق تلفی کی ہے، صاف وشفاف تحقیقات کی جائیں، جرگہ شرکاء، تمام تحفظات دور کرینگے ڈپٹی کمشنر خالد اقبال کا جرگے ممبران کو یقین دہانی۔ تفصیلات کے مطابق اج بروز سوموار تحصیل مکین بازار سے سینکڑوں گاڑیوں پر مشتمل آحتجاجی ریلی سینکڑوں کلومیٹر کی مسافت طے کرکے ڈپٹی کمشنر کمپاونڈ جنوبی وزیرستان(ٹانک) پہنچ گئی ریلی جو بعد میں ایک بہت بڑے جرگے میں تبدیل ہوگئی جسمیں ہزاروں افراد نے شرکت کی، جرگے سے تاجر یونین کے صدر نور محمد، ملک حاجی محمد، ملک بشیر، ملک جلال، ملک قیوم، مولانا اعصام الدین اور دیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ آپریشنوں کے دوران مکین بازار کو مکمل طور پر بلڈوز کرکے ہزاروں دوکانوں کو ملبے کا ڈھیر بنا دیا تھا جس سے غریب کانداروں کا کاروبار تباہ ہوکر دربدر ہوگئے تھے اور آج بھی آپریشنوں سے متاثرہ دوکانداروں کو حکومت کی جانب سے کسی قسم کی امداد نہیں ملی، مقررین کا کہنا تھا کہ سمیڈا آرگنائزیشن نے خفیہ طریقے سے سروے کرکے کچھ منظور نظر اور سفارشی افراد کو امدادی لسٹ میں شامل کرکے اصل حق داروں کو اپنے جائز حقوق سے محروم کردیا ہے، انہوں نے سمیڈا کی جانب سے کی جانے والی سروے میں بے قاعدگیوں کی اعلی سطح تحقیقات سمیت ملوث اہلکاروں کے خلاف کاروائی اور دوبارہ صاف وشفاف طریقے سے سروے کرانے کا مطالبہ کیا، اس موقع پر ڈپٹی کمشنر خالد اقبال خٹک نے جرگہ شرکاء کو یقین دلایا کہ اس سلسلے میں سمیڈا حکام، متاثرین مکین بازار اور ضلعی انتظامیہ کے مابین عنقریب مذاکرات کا سلسلہ شروع کرکے اپ کے تحفظات دور کرینگے، اس موقع پر ایک چودہ رکنی مذاکراتی کمیٹی تشکیل دے دی گئی جو مکین بازار کے متاترہ دوکانداروں کی نمائندگی کرکے ان کو پہنچنے والے نقصانات کی آزالے کیلئے اعلی حکومتی عہدیداروں سے گفت و شنید کا سلسلہ شروع کرینگے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -